پانچ سال بعد پاکستانی کرکٹ ٹیم کی ویسٹ انڈین کرکٹ ٹیم کے ہاتحوں ٹیسٹ مییچ شکست

ڈیسک، شارجہ پاکستان ویسٹ انڈیز ٹیسٹ سیریز؛

پاکستان سیریز کے آخری میچ میں اپنی جیت کا تسلسل برقرار نا رکھ سکی

اور پاکستانی ٹیم کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے اس سیریز کے آخری ٹیسٹ میچ کا مقرر کردہ دورانیہ بھی پورا نا ہو سکا

اور میچ کےتیسرے روز ہی پاکستانی کرکٹ ٹیم یہ میچ ہار گئی۔

گو کے پاکستانی ٹیم یہ سیریز جیت چکی تھی

لیکن اس ہار کے ساتھ پاکستانی کرکٹ ٹیم کا ویسٹ انڈین ٹیم کے خلاف پانچ سالہ فتوحات کا تسلسل بھی ٹوٹ گیا ۔ 

اگرچہ ہار اور جیت کھیل کا حصہ ہیں لیکن پاکستانی ٹیم کی اس شکست نے بہت سے سوالات پیدا کر دیئے ہیں

جیسا کہ

کیا پاکستان کی ہار کی وجہ صرف ویسٹ انڈین ٹیم کی اچھی کارکردگی تھی یا اس کے پیچھے کچھ اور عوامل کار فرما ہی٘ں

اور  کیا پاکستان ٹیسٹ کرکٹ رینکنگ میں اپنی سابقہ پوزیشن برقرار رکھ پائے گا یا نہیں

اور کیا پاکستانی کرکٹ ٹیم اپنی اس میچ کی غلطیوں سے کچھ سبق سیکھے گی یا نہیں 

اور ایک سوال یہ بھی ہےکہ کیا اس میچ کے بعد پاکستانی کرکٹ ٹیم کی پوزیشن ٹیسٹ میچوں میں بھی کہیں

وہ ہی نا ہو جائےجو  ون ڈے اور ٹی ٹوینٹی میں ہے 

ایسے ہی اور بھی بہت سے سوالات ہیں لیکن ہم ان کا ذکر اس لئے نہیں کر رہے ہیں کے جیسا بھی ہو کم از کم ٹیسٹ سیریز تو

پاکستان نے جیتی ہے اگر آخری میچ ہار گئے تو کیا ہوا

ہار اور جیت دونوں ہی کھیل کا حصہ ہیں 

آخر میں صرف یہی کہوں گا کہ۔

         =   گرتے ہیں شہسوار ہی میدان جنگ میں =

متعلقہ خبریں