بیٹے کا قتل کا مقدمہ فوجی عدالت میں چلایا جائے،اقبال خان کا مطالبہ

بیٹے کا قتل کا مقدمہ فوجی عدالت میں چلایا جائے،اقبال خان کا مطالبہ

ویب ڈیسک:  مشال خان کے والد اقبال خان نے کہاہے کہ مشال خان کے قاتل بااثر لوگ ہیں  اور مطالبہ کیا ہے کہ بیٹے کا قتل کا مقدمہ فوجی عدالت میں چلایا جائے۔

پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عبدالولی خان یونیورسٹی کےجاں بحق طالبعلم مشال خان کےوالداقبال خان کہنا تھا کہ میرےبیٹےکوبےدردی سے بدترین دہشتگردی کرکے شہید کیا گیا ان کا کہنا تھا کہ   جے آئی ٹی رپورٹ سے مطمئن ہوں جے آئی ٹی رپورٹ  میں ثابت ہوا کہ میرے بیٹے نے کوئی مذہبی جرم نہیں کیا تھا۔ میرے بیٹے کو اسلئے شہید کیا گیا کہ  میرے بیٹے نے عبدالولی خان یونیورسٹی کے چوروں کوچورکہاتھا۔میرےبیٹےنےطلبہ کی فیسوں میں اضافے کی مخالفت کی تھی میرےبیٹےکوبےدردی سےقتل کیاگیا. اقبال خان کا کہنا تھا کہ  مشال خان کے قاتل بااثڑ لوگ ہیں   انہوں نے مطالبہ کیا بیٹے کے قتل کا مقدمہ فوجی عدالت میں چلایاجائے۔اور یہ بھی مطالبہ  کیا کہ تمام سیاسی جماعتیں مشال خان کو فوری انصاف میں ہمارا ساتھ دیں۔ان کا کہنا تھا کہ عبدالولی خان یونیورسٹی مردان کے تمام رکارڈ کی چھان بین کرائی جائے   کہی ایسا نہ ہو کہ مشال خان کی قربانیان رائیگاں چلی جائیں ۔ اقبال خان کا مزید یہ بھی کہنا تھا کہ کیس کی پیروی کےلیےوکلاکی فیسیں اداکرنےکی حیثیت نہیں  صوبائی حکومت یاوفاقی حکومت میرے وکلاکی فیسیں ادا کرے، بیٹےکاقتل کیس مردان سےپشاورہائی کورٹ منتقل کیاجائے۔



ہ

متعلقہ خبریں