پامیلا اینڈرسن کا اوباما کو خط ،جولین اسانج کو معافی دینے کا مطالبہ

پامیلا اینڈرسن کا اوباما کو خط ،جولین اسانج کو معافی دینے کا مطالبہ

ڈیسک:بے واچ اسٹار پامیلا اینڈرسن نے امریکی صدر باراک اوباما سے درخواست کی ہے کہ وہ گزشتہ برس امریکی صدراتی انتخابات کے دوران ڈیمو کریٹک ای میلز ہیک کرنے پر ویب سائٹ وکی لیکس کے سربراہ جولین اسانج کی معافی پر غور کریں۔

خبر رساں ادارے کے مطابق 49 سالہ اداکارہ نے صدر اوباما کے نام مراسلہ تحریر کیا ہے جس میں انہوں نے صدر اوباما سے کہا ہے کہ وہ اپنے صدارتی دور کے آخری ایام میں جولین اسانج کے خلاف ہیکنگ اسکینڈل کی تحقیقات روکنے اور معافی کی درخواست پر غور کریں۔

اداکارہ نے یہ خط اپنی آفیشل ویب سائٹ پر پوسٹ کیا ہے جس میں اداکارہ نے کہا ہے کہ میں جانتی ہوں کہ جولین کو ایک منفی شخص کے طور پر پیش کیا گیا ہے مگر وہ ایک ذہین شخص ہے جس کی صلاحیتوں سے فائدہ اٹھایا جانا چاہئے.

وکی لیکس کے ذریعے اس نے جو مواد شائع کیا ہے وہ شفاف اور غیرسنسر شدہ ہے، وہ صرف سچ تھا ،جولین اسانج اور وکی لیکس لازمی ہیں،خاص طور موجودہ سیاسی صورتحال میں ہمیں سچ بولنے والوں کی ضرورت ہمیشہ سے زیادہ ہے۔

مراسلے کے اختتام میں پامیلا نے صدر اوباما سے کہا ہے کہ وہ جولین اسانج اور ان کے بچوں کے بارے میں سوچیں ، انہوں نے لوگوں کو صرف کرپشن سے بچانے کی کوشش کی ہے۔ ممکن بنائیں کہ جولین اسانج آزادی سے سفر کرسکے اور اپنے بچوں اور ان کی ماں کو دیکھ سکے۔

اس کا کوئی ایجنڈہ نہیں تھا اس نے صرف ہمیں معلومات فراہم کیں اور کرپشن سے بچایا۔

متعلقہ خبریں