سپریم کورٹ میں پاناماپیپرز کیس کی سماعت

سپریم کورٹ میں پاناماپیپرز کیس کی سماعت

ڈیسک: سپریم کورٹ میں پاناما پیپرز کی تحقیقات کیلئے دائر درخواستوں کی سماعت جاری ہے۔

کیس میں دلائل دیتے ہوئے وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے وکیل مخدوم  علی خان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کی کوئی بھی آف شور کمپنی موجود نہیں ۔

اس کے علاوہ میاں محمد نواز شریف کو بیٹے حسین نواز شریف کی جانب سے جتنے تحفے ملے ان کا ذکر ان تمام گوشواروں میں موجود ہے جو عدالت میں جمع کرائے گئے ہیں ۔

وکیل کا کہنا تھا کہ حسین نواز شریف کا نیشنل ٹیکس نمبر موجود ہے اور وہ باقاعدگی سے ٹیکس ادا کرتے ہیں ۔

مخدوم علی خان کا کہنا ہے کہ   درخواست گزاروں کی جانب سے وزیراعظم اور ان کی فیملی پر مختلف الزامات لگائے گئے۔

پٹیشن میں نواز شریف پر جھوٹ بولنے کا الزام ہی عائد نہیں کیا گیا بلکہ الزام عائد کیا گیا کہ مریم نواز والد کے زیر کفالت ہیں اور یہ بھی الزام لگا گیا کہ وزیر اعظم اثاثے ظاہر نہ کرنے پر رکن پارلیمنٹ کے اہل نہیں رہے۔

متعلقہ خبریں