پاکستان کو دہشتگردی کا ایک اور زخم، پنجاب اسمبلی کے باہر بم دھماکا،شہر لاہور لہو لہان، 16 مزید پاکستانی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے،،

پاکستان کو دہشتگردی کا ایک اور زخم، پنجاب اسمبلی کے باہر بم دھماکا،شہر لاہور لہو لہان، 16 مزید پاکستانی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے،،

دھماکےمیں ڈی آئی جی ٹریفک احمد مبین اورایس ایس پی احمد گوندل سمیت 16 شہری شہید ، 73 افراد زخمی

 مال روڈ پر خودکش حملے میں ڈی آئی جی ٹریفک لاہور کیپٹن (ر) احمد مبین اور ایس ایس پی زاہد گوندل سمیت 16 افراد شہید جب کہ 70 سے زائد زخمی ۔شہید اور زخمی ہونے والوں میں پولیس اہلکار شامل

 تفصیلات کے مطابق   لاہور کے علاقے مال روڈ پر چیئرنگ کراس کے قریب ادویہ ساز کمپنیوں اور میڈیکل اسٹورز کے مالکان کا احتجاج جاری تھا کہ اس دوران 6 بج کر 7 منٹ پر زور دار دھماکا ہوا جس کے بعد جائے وقوعہ پر بھگدڑ مچ گئی جب کہ دھماکے کی جگہ آگ لگ گئی اور دھواں اٹھنے لگا۔

دھماکا اس قدر شدید تھا کہ اس سے قریبی عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے جب کہ قریب کھڑی گاڑیوں کو بھی شدید نقصان پہنچا۔ دھماکے کے بعد جائے وقوعہ کے قریب موجود لوگوں نے فوری طور پر اپنی مدد آپ کے تحت زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا جب کہ پاک آرمی کے جوانوں نے بھی جائے وقوعہ پہنچ علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔

فورسز ، ریسکیو اہلکاروں اور عام عوام نے  امدادی سرگرمیاں  کرتے ہوئے زخمیوں کو مختلف اسپتالوں میں منتقل کیا، دھماکے کے بعد لاہور بھر کے اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کرکے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف کو طلب کرلیا گیا۔جبکہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لیکر سرچ آپریشن شروع کر دیا 

متعلقہ خبریں