درگاہ لعل شہباز قلندر میں خودکش دھماکا، 88 افراد جاں بحق،سینکڑوں زخمی

درگاہ لعل شہباز قلندر میں خودکش دھماکا، 88 افراد جاں بحق،سینکڑوں زخمی

ویب ڈیسک:سیہون شریف میں لعل شہباز قلندرؒ کے مزار کے احاطے میں ہونیوالے دھماکے کے نتیجے میں80زائرین شہیداور 250 سے زائد زخمی ہو گئے ہیں۔

 تفصیلات کے مطابق لعل شہباز قلندرؒ کے مزار کے احاطے میں اس وقت دھماکا ہوا جب مزار میں دھمال جاری تھا اور اس کے احاطے میں سیکڑوں لوگ موجود تھے، دھماکا انتہائی زور دار تھا۔دھماکے  کے فوار بعد  پولیس اور امدادی ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئی ہیں۔

زخمیوں  کو دادو اور جامشور کے ہسپتالوں میں منتقل کیا گیاجن میں  خواتین اور بچے بھی شامل ہیں جبکہ دادو، جامشور اور کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے ابتدائی اطلاعات کے مطابق دھماکا خودکش تھا حملہ آور گولڈن گیٹ سے مزار کے احاطے میں داخل ہوا۔

دھماکے کے وقت سیکڑوں لوگ مزار کے احاطے میں موجود تھے ۔

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ حالیہ دہشتگرد حملے دشمن قوتوں کی ہدایات پر اور افغانستان میں موجود دہشتگردوں کے ٹھکانوں سے کئے جا رہے ہیں، ہم اپنا دفاع بھی کریں گے اور دشمن کو جواب بھی دیں گے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے قوم سے اپیل کی ہے کہ مطمئن رہیں۔ پاک فوج اس مشکل گھڑی میں قوم کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق آرمی چیف کی ہدایت پر فوج اور رینجرز کے دستے سیہون شریف کیجانب روانہ کر دیئے گئے ہیں۔

آرمی چیف قمر جاوید باجوہ نے زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات دینے کی بھی ہدایت دی ہے۔

متعلقہ خبریں