پانامہ کا فیصلہ، وزیر اعظم کیخلاف تحقیقاتی ٹیم کا حکم

پانامہ کا فیصلہ، وزیر اعظم کیخلاف تحقیقاتی ٹیم کا حکم

ویب ڈیسک: سپریم کورٹ آف پاکستان کے پانچ رکنی بنچ نے پانامہ سے متعلق اپنا فیصلہ سنا دیا۔

فیصلے کے مطابق سپریم کورٹ کے پانچ ججز پر مشتمل لارجر بنچ نے پانامہ لیکس کیس پر 540صفحات پر مشتمل فیصلے میں کہا ہے کہ وزیر اعظم اور ان کے بیٹوں کی طرف دی گئی تفصیلات ناکافی ہیں جس سے قطر رقم کی منتقلی ثابت نہیں ہوتی اور گلف سٹیل مل کیلئے سرمایہ کاری اور جائیداد کی تفصیلات نا کافی ہیں سپریم کورٹ کے تین ججز نے تحقیقات کا مطالبہ کیا جبکہ دو ججز نے وزیر اعظم کی نا اہلی کا مطالبہ کیا جس کے بعد عدالت نے حکم دیا کہ وزیر اعظم اور ان کے بیٹوں کیخلاف ایک ہفتے کے اندر اندر جے آئی ٹی تشکیل دینے کا حکم دیا اورحکم دیا کہ جے آئی ٹی 60 دن کے اندر اندر اپنی تحقیقات مکمل کرکے رپورٹ پیش کرے، فیصلے کے بعد دونوں حکومت اور اپوزیشن  دونوں طرفین نے فیصلے کو اپنی کامیابی قرار دیتے ہوئے خوشی کا اظہار کیا۔

متعلقہ خبریں