وفاقی کے حمایتی فاٹا کے مسئلے میں تاخیری حربے استعمال کر رہے ہیں،آفتاب احمد خان شرپاو

وفاقی کے حمایتی فاٹا کے مسئلے میں تاخیری حربے استعمال کر رہے ہیں،آفتاب احمد خان شرپاو

ویب ڈِیسک:  وفاقی حکومت کے حمایتی فاٹا کے مسئلے میں تاخیری حربے استعمال کر رہے ہیں جو وہاں کے پختونوں کے ساتھ سراسر زیادتی ہے۔آفتاب احمد خان شرپاو

چارسدہ میں شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے آفتاب احمد خان شرپاو کا کہناتھا کہ  پختونوں کے مسائل اجاگر کرنا ہمارا اولین فرض ہے فاٹا کو فوری طور پر خیبر پختونخوا میں ضم کیا جائے۔ وفاقی حکومت کے حمایتی فاٹا کے مسئلے میں تاخیری حربے استعمال کر رہے ہیں۔ فاٹا کے مسئلے کو پانچ سال تک لٹھکانا وہاں  کے پختونوں کے ساتھ زیادتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ اور پنجاب میں پختونوں کے ساتھ زیادتی پر تشویش ہے پختونوں کو الگ مخلوق سمجھنے والوں کا مقابلہ کرینگے۔

آفتاب احمد خان شرپاو نے کہا کہ پاک افغان کشیدگی دور کرنا وقت کا تقاضہ ہےہمارا مذہب ثقافت رہن سہن اور زبان ایک ہے، ہم الگ نہیں ہوسکتے۔

لوڈشیڈنگ کے حوالے سے آفتاب احمد خان شیرپاو کا کہنا تھا کہ خیبر پختونخوا میں 18گھنٹے لوڈ شیڈنگ زیادتی ہے پنجاب اور کے پی میں یکسا  لوڈ شیڈنگ ہونی چاہئے۔

اگر لوڈشینگ کا مسلہ حل نہیں ہوا  تو نوازشریف کے خلاف بھر پور احتجاج کرینگے۔

اس موقع پر سابق تحصیل ناظم عاشق علی نے اے این پی سے مستعفی ہوکر قومی وطن پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی۔

متعلقہ خبریں