دشمنوں کا پاکستان کو تنہا کرنے کا خواب ادھورا رہ گیا۔

دشمنوں کا پاکستان کو تنہا کرنے کا خواب ادھورا رہ گیا۔

ڈیسک: ترکمانستان کے دارالحکومت اشک آباد میں منعقدہ بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ

خطے میں علاقائی رابطوں کو بہتر بنانا ہماری پالیسی کاحصہ ہے۔

پاکستان اپنے محل وقوع کو معاشی میدان میں ترقی کے لیے استعمال کرنا چاہتا ہے

کیونکہ بہتر رابطوں کی پالیسی کے فوائد پورے خطے کو حاصل ہو سکتے ہیں،

ہم خطےکے وسائل سے استفادہ کرنےکے لیے ماحول قائم کررہے ہیں

کیونکہ مشترکہ کوششوں سے ہی ہم خطے میں امن، سلامتی اور ترقی کو یقینی بنائیں گے۔


وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ ترقیاتی اہداف کےحصول میں ٹرانسپورٹ پرخصوصی توجہ دی جاری ہے۔

2030کےترقیاتی ایجنڈے کےتحت سڑکوں کی تعمیر پر توجہ دے رہے ہیں۔

جب کہ پاکستان ریلوے کی اپ گریڈیشن پر بھی کام جاری ہے۔

پاک چین اقتصادی راہداری خطے کی ترقی کے لیےبہت اہم ہے،

پاکستان کو تنہا کرنے کی کوششیں ناکام ہوگئی ہیں،

دنیا خود چل کر پاکستان کے پاس آنے لگی ہے۔

ایران کے بعد روس بھی سی پیک میں شمولیت کا خواہش مند ہے۔

متعلقہ خبریں