عدالت بلایا گیا تو ضرور جاونگااو رآفر لانے والے کا نام بھی بتاؤں گا،عمران خان

عدالت بلایا گیا تو ضرور جاونگااو رآفر لانے والے کا نام بھی بتاؤں گا،عمران خان

 ویب ڈیسک:وزیر اعلیٰ پنجاب کے قریبی ساتھی کی جانب سے 10 دس ارب کی آفر ہوئی جس نے عدالت جانا ہے جائے عدالت بلایا گیا تو ضرور جاونگااو رآفر لانے والے کا نام بھی  بتاؤں گا،عمران خان 

اسلام آباد کے پریڈ گراونڈ میں جلسے سے خطاب کے دوران  چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ قوم  کو بے وقوف بنایا جا رہا ہے جس شخص نے مجھے 10 ارب روپے کی پیشکش کی اس کو بھی 2 ارب روپے ملنے تھے۔ انہوں نے کہاکہ یہ میرے خلاف ہرجانے کاکیس کرناچاہتے ہے خوشی سے کریں میں عدالت میں ہی پیشکش کرنے والے کانام بتاؤں گا اور عدالت سے یہ درخواست کروں گا کہ اس شخص کوتحفظ فراہم کیاجائے کیوں کہ مجھے پتہ ہے کہ آپ لوگ سیاست دان نہیں بلکہ مافیا ہیں اگر میں نے 10 ارب روپے کی پیشکش لانے والے کا نام بتا دیا تو اسے انتقامی کارروائی کا نشانہ بنا کر اس کا کاروبار بند کرسکتے ہیں۔عمران خان نے پاناما کیس کا ذکر کرتے ہوئے کہا دو ججوں نے کہا نوازشریف صادق اور امین نہیں، کرپٹ بھی ہے اور جھوٹا بھی لیکن میں حیران ہوں موٹو گینگ مٹھائیاں بانٹ رہاتھا۔

ان کا کہنا تھا کہا کہ لوگوں کواپنے لیے نہیں اپنے ملک کے لیے بلاتا ہوں، لوگ میری عزت رکھتے ہیں ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں،حکومت کیخلاف تحریک کا آغاز کر رہے ہیں، گھر نہیں بیٹھیں گے، شہر شہر جائیں گے اور لوگوں سے حکومت کے سوشل بائیکاٹ کا مطالبہ کریں گے

عمران خان کا یہ بھی کہنا تھا کہ خواجہ آصف پارلیمنٹ میں کہہ رہے ہیں کہ فکر نہ کریں میاں صاحب! لوگ بھول جائیں گے،عمران خان نے جحلسے میں موجود لوگوں کو مخاطب کرتے ہوئے  کہا کہ پاکستانیوں میں آپ کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں  کہ پاناما کیس میں نواز شریف کی تلاشی آپ لوگوں کی وجہ سے ممکن ہوئی ۔
عمران خان نے مزید کہا کہ کہا کہ نوازشریف میں اتنی جرات نہیں کہ نریندر مودی سے کہہ سکے کہ وہ کشمیرمیں دہشتگردی کررہاہے، جو کمشیریوں کیساتھ کیا جا رہا ہے اگر کشمیری مسلمان نہ ہوتے تو ساری دنیا نے ہندوستان کے پیچھے پڑ جانا تھا،سارے پاکستانی کشمیری عوام کے ساتھ ہیں ۔

متعلقہ خبریں