پنجاب پولیس کا خانیوال میں ’چار شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ‘

پنجاب پولیس کا خانیوال میں ’چار شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ‘

پاکستان کے صوبے پنجاب کے ضلع خانیوال میں پنجاب پولیس کے شعبۂ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) نے ایک کارروائی کے دوران تحریک طالبان کے چار مشتبہ شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعوی' کیا ہے۔

یہ کارروائی سنیچر اور اتوار کی رات خانیوال کے علاقے احمد ولی پور میں مہر شاہ چوک کے قریب کی گئی۔

پنجاب پولیس کا القا‏عدہ سے منسلک شدت پسندوں کی ہلاکت کا دعوی‘

صحافی عبدالناصر خان کے مطابق گذشتہ دو دنوں کے دوران پنجاب میں شدت پسندوں کے خلاف پولیس کی یہ دوسری کارروائی ہے جس میں مجموعی طور پر نو شدت پسندوں کو ہلاک کیا گیا۔

گذشتہ کارروائی جمعے اور سنیچر کی درمیانی رات گوجرانوالہ میں کی گئی جہاں سی ٹی ڈی پنجاب کے ترجمان کے مطابق کالعدم تنظیم القاعدہ سے تعلق رکھنے والے پانچ شدت پسند کو ہلاک کیا گیا۔

سی ٹی ٹی پنجاب کے ترجمان کے مطابق انھیں اطلاع ملی تھی کہ کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان کے چھ یا سات شدت پسند خانیوال میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں، دفاتر، اہم تنصیبات اور سیاسی شخصیات کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔

ترجمان کے مطابق اس اطلاع کے بعد سی ٹی ڈی ملتان کی ایک ٹیم نے شدت پسندوں کے ٹھکانے پر چھاپہ مارا اور انھیں ہتھیار پھینک کر خود کو حوالے کرنے کا کہا گیا لیکن شدت پسندوں نے ہتھیار پھینکنے کی بجائے چھاپہ مار ٹیم پر فائرنگ کرنے کے ساتھ دستی بم بھی پھینکے جس پر پولیس نے بھی فائرنگ کا جواب دیا۔

سی ٹی ٹی پنجاب کے ترجمان کے مطابق فائرنگ کا سلسلہ رکنے کے بعد جب پولیس نے جائے وقوعہ کا جائزہ لیا تو وہاں چار شدت پسندوں کی لاشیں پڑی تھیں جو اپنے ہی ساتھیوں کی فائرنگ سے مارے گئے تھے جب کہ ان کے دو یا تین دیگر ساتھی رات کی تاریکی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہوگئے۔

ترجمان کے مطابق ہلاک ہونے والے شدت پسندوں سے ایک بندوق، دو پستول، اور دو ہینڈ گرینیڈ برآمد ہوئے۔

متعلقہ خبریں