Daily Mashriq

العزیزیہ ریفرنس، احتساب عدالت کا فیصلہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں‌ چیلنج

العزیزیہ ریفرنس، احتساب عدالت کا فیصلہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں‌ چیلنج

ویب ڈیسک: سابق وزیراعظم نواز شریف نے العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید کی سزا کے خلاف اسلام آباد ہائی کورٹ میں اپیل دائر کردی۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے 24 دسمبر کو نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید کی سزا سنائی تھی، 131 صفحات پر مشتمل تفصیلی فیصلے میں کہا گیا کہ نواز شریف العزیزیہ اور ہل میٹل کے اصل مالک ثابت ہوئے ہیں جب کہ وہ اثاثوں کے لیے جائز ذرائع آمدن بتانے میں ناکام رہے

نوازشریف کی جانب سے ان کے وکلا نے فیصلے کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا ہے، دائر اپیل میں سزا کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ احتساب عدالت کا فیصلہ غلط فہمی اور قانون کی غلط تشریح پر مبنی ہے، دستیاب شواہد کو درست اندازمیں نہیں پڑھا گیا، ملزم کی طرف سے اٹھائے گئے اعتراضات کواحتساب عدالت نے سنے بغیر فیصلہ سنایا، احتساب عدالت کے فیصلے میں قانونی سقم موجود ہے، احتساب عدالت کا فیصلہ خلاف قانون ہے، اس لیے فیصلے کو کالعدم قراردیا جائے۔

اپیل میں  فیصلے تک نواز شریف کی سزا معطل کر کے ضمانت پر رہا کرنے کی استدعا کی گئی۔

نواز شریف کو ایون فیلڈ ریفرنس میں بھی سزا ہوچکی ہے اور اس کے خلاف اپیل بھی اسلام آباد ہائی کورٹ میں ہی زیر سماعت ہے۔

متعلقہ خبریں