Daily Mashriq

لاہور: ملازمہ کی پھندہ لگی لاش ملنے پر وکیل اور اہلیہ کے خلاف مقدمہ درج

لاہور: ملازمہ کی پھندہ لگی لاش ملنے پر وکیل اور اہلیہ کے خلاف مقدمہ درج

لاہور کے علاقے اچھرہ میں گھر میں کام کرنے والی نوجوان لڑکی کی پھندہ لگی لاش ملنے پر وکیل اور ان کی بیوی کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا۔

پولیس کے مطابق اوکاڑہ سے تعلق رکھنے والی 15 سالہ مبین بی بی چوہدری منظور ایڈوکیٹ کے گھر گزشتہ ڈیڑھ ماہ سے کام کررہی تھی جہاں پھانسی کی وجہ سے وہ مردہ پائی گئی۔

مذکورہ لڑکی کی ماں تسمیہ نے بتایا کہ مبین بی بی کے مالکان نے شکایت کی تھی کہ وہ کام ٹھیک سے نہیں کررہی جس پر وہ حال ہی میں اس سے ملنے آئی تھی۔

تسمیہ نے مزید بتایا کہ انہوں نے اپنی بیٹی کو بہتر طریقے سے کام کرنے کی ہدایت کی اور پھ وہاں سے واپس آگئی تھی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’ 29 جون کو مجھے مالکان کی جانب سے کال موصول ہوئی کہ میری بیٹی کی طبیعت ٹھیک نہیں‘۔

جس پر وہ اور ان کے شوہر صبح اس گھر گئے جہاں وہ کام کیا کرتی تھیں لیکن وہاں پہہنچنے پر انہیں بتایا گیا کہ مبین بی بی نے خودکشی کرلی۔

تسمیہ نے الزام لگایا کہ چوہدری منظور اورا ان کی بیوی نے ان کی بیٹی کو قتل کیا ہے۔

بعدازاں پولیس نے ملازمہ کی لاش پوسٹ مارٹم کے لیے مردہ خانے منتقل کر کے منظور اور ان کی بیوی کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔

مبین بی بی کے لواحقین نے قتل کے خلاف لاہور جنرل ہسپتال کے باہر احتجاج کیا اور وکیل اور ان کے اہلِ خانہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔

اس سلسلے میں اچھرہ اسٹیشن افسر حسن رضا نے بتایا کہ انہیں لڑکی کے جسم پر کسی قسم کے تشدد کے نشان نہیں پائے گئے اور موت کی وجہ جاننے کے لیے تحقیقات جاری ہیں۔

متعلقہ خبریں