شارجہ ٹیسٹ: 56 رنز خسارے کے بعد پاکستان کی دوسری اننگز کا آغاز

شارجہ ٹیسٹ: 56 رنز خسارے کے بعد پاکستان کی دوسری اننگز کا آغاز

شارجہ میں ٹیسٹ سیریز کے تیسرے کرکٹ میچ کے تیسرے روز ویسٹ انڈیز کی ٹیم پہلی اننگز میں 337 رنز بنا کر آوٹ ہوگئی ہے اور اسے پاکستان پر 56 رنز کی برتری حاصل ہے۔

پاکستان کی دوسری اننگز کا آغاز ہو چکا ہے اور سمیع اسلم اور اظہر علی نے بیٹنگ اوپن کی ہے۔ اب سے کچھ دیر قبل پاکستان نے کسی وکٹ کے نقصان کے بغیر آٹھ رنز بنائے تھے۔

٭ میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

اس سے قبل کھانے کے وقفے کے بعد جب کھیل کا دوسرا سیشن شروع ہوا تو سنچری بنانے والے کریگ بریتھ ویٹ اور بشو نے ایک مرتبہ پھر کریز سنبھالی۔

تاہم پاکستانی ٹیم کی پیش رفت میں حائل بلے باز بشو کو وہاب ریاض نے 27 رنز پر آؤٹ کر دیا۔

تیسرے روز کھیل کے آغاز میں ہی محمد عامر نے جیسن ہولڈر کو آؤٹ کر کے پاکستان کو ساتویں کامیابی دلوائی۔

بریتھ ویٹ نے دن کے آغاز میں ہی مزید پانچ رنز بنا کر سنچری مکمل کی۔

پاکستان کو آٹھویں کامیابی اس وقت ملتے ملتے رہ گئی جب بشو کے کیچ کو تھرڈ امپائر نے غیرقانونی قرار دیا کیونکہ گیند فیلڈر کی ہیلمٹ کی گرل سے ٹکرا کر ان کے ہاتھ میں آئی تھی۔

پاکستان کی طرف سے وہاب ریاض نے پانچ، محمد عامر نے تین جبکہ یاسر شاہ اور ذولفقار بابر نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا ہے۔

کریگ بریتھ ویٹ کی ذمہ دارانہ بیٹنگ کے نتیجے میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم شارجہ ٹیسٹ کے دوسرے دن کھیل کے اختتام پر چھ وکٹوں پر 244 رنز بنانے میں کامیاب رہی تھی۔

اس سے قبل پاکستانی ٹیم دوسرے دن پہلے سیشن میں اپنے گذشتہ روز کے سکور میں 26 رنز کا اضافہ کرنے کے بعد 281 رنز پر آؤٹ ہوگئی تھی۔

کم سکور پر آؤٹ ہونے کے بعد پاکستانی ٹیم کے لیے بہت ضروری ہوگیا تھا کہ وہ ویسٹ انڈیز کو بڑے سکور تک پہنچنے نہ دے لیکن وہ اس میں پوری طرح کامیاب نہیں ہو سکی۔

اس میچ کے لیے پاکستان اور ویسٹ انڈیز کی ٹیموں میں دو، دو تبدیلیاں کی گئی ہیں۔

پاکستانی ٹیم میں فاسٹ بولرز سہیل خان اور راحت علی کی جگہ محمد عامر اور وہاب ریاض کو شامل کیا گیا ہے جبکہ ویسٹ انڈین ٹیم میں شائے ہوپ اور میگوئل کمنز کی جگہ شین ڈورچ اور الزاری جوزف شامل ہوئے ہیں۔

پاکستان یہ ٹیسٹ سیریز پہلے ہی دو صفر کی فیصلہ کن برتری حاصل کر چکا ہے اور اب اس کی نظریں ٹی 20 اور ون ڈے سیریز کے بعد ٹیسٹ سیریز میں بھی وائٹ واش پر ہیں۔

کھیل