Daily Mashriq

خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی میں ٹیکس فسیلیٹیشن سنٹر کا قیام، وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے افتتاح کیا

خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی میں ٹیکس فسیلیٹیشن سنٹر کا قیام، وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے افتتاح کیا

پشاور: خیبرپختونخواکے وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی پشاور کے ہیڈکوارٹر میں ماڈرن ٹیکس پئیر فیسیلیٹیشن سنٹر اور کثیرالمقاصد تربیتی مرکز کا افتتاح کیا جہاں خدمات فراہم کرنے والوں کی رجسٹریشن اور ٹیکس گوشوارے جمع کرنے کے لیے ون ونڈو آپریشن کے ذریعے سہولت میسر ہوگی افتتاحی تقریب کے موقع پر ڈائریکٹر جنرل کیپرا محمد طاہر اورکزئی مس میرین پفننگز فرسٹ سیکرٹری ڈیویلپمنٹ آف جرمن ایمبیسی اور کیپرا کے دیگر اعلیٰ عہدیداران سمیت جی آئی زیڈ کے نمائندے بھی موجود تھے ۔ 

افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر خزانہ نے کیپرا کی ٹیم کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ٹیکس دہندگان کی رجسٹریشن کیلئے ون ونڈو کی سہولت کا آغاز صوبائی حکومت کے کاروبار کو سہل بنانے کے اصلاحاتی ایجنڈے کا حصہ ہے انہوں نے قلیل عرصہ میں ٹیکس فیسیلیٹیشن سینٹر کے قیام اور اس کی فعالیت پر ڈی جی کیپرا اور ان کی ٹیم کی کاوشوں کو سراہا وزیر خزانہ نے اس امر پر زور دیا کہ مذکورہ مرکز میں ٹیکس دہندگان کو سہولیات فراہم کرنے کے علاوہ ان کے مسائل کے بروقت حل کو یقینی بنایا جائے گا صوبائی وزیر نے متعلقہ افسران سے کہا ہے کہ وہ شفافیت، عمدہ کارکردگی اور بہتر ردعمل کے ذریعے ادارے کی ساکھ اور وقار میں اضافے کے ساتھ تمام متعلقہ شراکت داروں کے ساتھ بہتر روابط پیدا کریں انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے روز اول سے معاشی ترقی کیلئے ریونیو میں اضافے اور ٹیکس اصلاحات کے لیے مثالی اقدامات اٹھائے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ ٹیکس ادائیگی کے نظام کو موثر بنانے اور ٹیکس نیٹ میں اضافہ کرنے کے لئے عوام میں شعور اجاگر کرنا ہوگا وزیر خزانہ نے کہا کہ اگر ماضی کی حکومتوں نے گذشتہ 72 سالوں میں مشکل فیصلے کئے ہوتے تو آج ہمیں معاشی بدحالی نہ دیکھنی پڑتی انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی وفاقی اور صوبائی حکومت غیر روایتی انداز میں نیا ٹیکس کلچر قائم کر رہی ہے تیمور سلیم خان نے کہا کہ حکومت عوام سے جو ٹیکس وصول کرے گی وہ صرف اور صرف ان کی فلاح و بہبود کے لئے استعمال ہوگا انہوں نے کہا کہ ماضی میں عوام ٹیکس کا پیسہ حکمرانوں کی جیبوں میں جاتا تھا جس سے وہ امیر سے امیر تر اور عوام غریب سےغریب تر ہوتے چلے گئے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ماضی کے مقابلے میں بہتر محاصل کے حصول میں کامیاب ہوئے ہیں جن کی بدولتخیبرپختونخوا نے صرف پنجاب سے پانچ فیصد کم جبکہ سندھ بلوچستان سے بڑے سائز کے ریکارڈ سالانہ ترقیاتی پروگرام کے لئے وسائل مختص کئے ہیں انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع کے لئے دس سالہ ترقیاتی پروگرام کے تحت امسال 82 ارب روپے کے ترقیاتی فنڈز ر کھے گئے ہیں جن سے وہاں پر معاشی و سماجی ترقی کا بھرپور آغاز ہوگا تیمور سلیم نے کہا کہ کیپرا جیسے اداروں کے قیام سے حکومت اقتصادی ترقی کے خواب کو پورا کرنے کے لیے مزید اقدامات کرے گی اور2023ء تک خیبرپختونخوا میں 50 ارب روپے ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل کیا جائے گا۔ 

بعدازاں وزیر خزانہ نے دیگر مہمانوں کے ہمراہ نئے قائم ہونے والے ٹیکس فیسیلیٹیشن سنٹر کے مختلف حصوں کا تفصیلی معائنہ کیا جہاں پر ڈی جی کیپرا نے انہیں سنٹر کے قیام کے اغراض و مقاصد سے تفصیلی طور پر آگاہ کیا۔

متعلقہ خبریں