Daily Mashriq

’نیب نے گزشتہ برس ایک کھرب 50 ارب روپے برآمد کیے‘

’نیب نے گزشتہ برس ایک کھرب 50 ارب روپے برآمد کیے‘

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو (نیب) نے مختلف احتساب عدالتوں میں دائر 206 ریفرنس کے ذریعے بدعنوان عناصر سے ایک کھرب 50 ارب روپے برآمد کیے۔

انسداد بدعنوانی کے ادارے کی سال 2019 میں کارکردگی کا جائزہ لینے کے لیے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے چیئرمین نیب جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ سائنسی بنیادوں پر تفتیش کی وجہ سے بدعنوانی کے مقدمات میں سزا کی شرح 70 فیصد رہی۔

ان کا کہنا تھا کہ ’یہ کارکردگی شکایات کا جائزہ لے کر اور کمانڈ اینڈ انویسٹیگیشن سسٹم کے تحت انکوائریز کر کے مزید بہتر بنائی جاسکتی ہے۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ گزشتہ برس دائر کیے گئے ایک ہزار 2 سو 62 ریفرنسز میں 9 کھرب 43 ارب روپےکی کرپشن کی گئی۔

جسٹس (ر جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ نیب کی پہلی ترجیح میگا کرپشن کیسز کو منطقی انجام تک پہنچانا اور لوٹی ہوئی دولت برآمد کرنا ہے۔

انہوں نے سال 2019 میں نیب کی مجموعی کارکردگی کو سراہا اور تمام ڈائریکٹر جنرلز کو ہدایت کی کہ تمام شکایات کی تصدیق کر کے قانون کے مطابق متعینہ 10 ماہ کی مدت میں انکوائریز اور تفتیش کی جائیں۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ نیب کی کارکردگی کو معتبر قومی اور بین الاقوامی اداروں نے بھی سراہا۔

انہوں نے نیب کے تمام تفتیشی افسران اور پراسیکیوٹرز کو سائنسی بنیادوں پر وائٹ کالر جرائم کی تفتیش کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ ’عدالتوں میں کیسز کی بھرپور طریقے سے پیروی کی جائے تا کہ بدعنوان عناصر کو قانون کے مطابق سزا مل سکے‘۔

انہوں نے کہا کہ نیب نے میرٹ پر افسران بھرتی کیے ہیں تا کہ ادارے کی موجودہ ورک فورس کو توسیع دے کر اس کی صلاحیت میں اضافہ کیا جائے۔

نیب کے ڈائریکٹر جنرل (آپریشنز) ظاہر شاہ کے مطابق بیورو کو سال 2019 میں 51 ہزار 5 سو 91 شکایات موصول ہوئیں جس میں سے قانون کے مطابق 46 ہزار ایک سو 23 درخواستیں نمٹا دی گئی جبکہ 13 ہزار 2 سو 99 شکایات پر کام کیا جارہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ نیب نے سال 2019 میں ایک ہزار 4 سو 64 شکایات کی تصدیق کرنے کی منظوری دی جس میں سے ایک ہزار 3 سو 62 کو قانون کے مطابق جانچا گیا اور 7 سو 70 شکایات زیر تفتیش ہیں۔

اسی طرح انسداد بدعنوانی کے ادارے نے گزشتہ برس 5 سو 74 انکوائریز کی منظوری دی جبکہ 6 سو 58 شکایات پر تفتیش مکمل ہپوئی اور 8 سو 59 انکوائریزپر کام جاری ہیں۔

متعلقہ خبریں