Daily Mashriq

کرتارپورراہداری منصوبے کا آڈٹ کرانے کا فیصلہ

کرتارپورراہداری منصوبے کا آڈٹ کرانے کا فیصلہ

آڈیٹر جنرل نے 18ہ ماہ میں 53 ارب کی وصولیاں کیں

 اسلام آباد: پبلک اکاؤنٹس اکمیٹی نے کرتارپورراہداری منصوبے کاآڈٹ کرانے کافیصلہ کرلیا۔

کمیٹی نے وزارتوں میں بے ضابطگیوں کے مرتکب اہلکاروں کو سزاؤں کا ڈیٹا بھی مانگ لیا۔تنویر حسین کی زیرسربراہی اجلاس میں آڈیٹر جنرل نے آگاہ کیا کرتارپورراہداری کے متعلق ڈیفنس سے ریکارڈ مانگا ہے، ایاز صادق نے کہا کہ فنانشل و پیپرا رولزپر عملدرآمد بارے رپورٹ طلب کی جائے، آڈیٹر جنرل نے آگاہ کیا۔

آڈیٹر جنرل نے 18ہ ماہ میں 53 ارب کی وصولیاں کیں، ارکان نے زوردیا بے ضابطگیوں کے ذمے داروں کو سزایقینی بنائیں، نور عالم کا کہنا تھا ہم اہم مقدمے نیب و ایف آئی اے کوبھیجتے ہیں مگروہ دلچسپی نہیں لیتے، تنویرحسین نے کہا نیب کی ترجیح سیاسی مقدمے ہیں، اس طرف وہ توجہ نہیں دیتے، ایاز صادق نے سوال اٹھایانیب و ایف آئی اے کاآڈٹ کبھی ہوا؟آڈیٹر جنرل نے ہاں میں جواب دیا۔

متعلقہ خبریں