Daily Mashriq

برطانوی شہزادی کو ’بد مزاج خاتون‘ نہیں کہا، ڈونلڈ ٹرمپ

برطانوی شہزادی کو ’بد مزاج خاتون‘ نہیں کہا، ڈونلڈ ٹرمپ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وضاحت کی ہے کہ انہوں نے برطانوی شہزادی اور شہزادہ ہیری کی اہلیہ ڈچز آف سسیکس میگھن مارکل کو کبھی ’بد مزاج خاتون‘ نہیں کہا کہا۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے ٹوئیٹ کے ذریعے وضاحت کی کہ انہوں نے برطانوی شاہی خاندان کی بہو کو حالیہ انٹرویو کے دوران ’بد مزاج خاتون‘ نہیں کہا، میڈیا نے ان کے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا۔

خبر ساں ادارے ’ایسوسی ایٹڈ پریس‘ (اے پی) کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ نے حال ہی میں برطانوی اخبار ’دی سن‘ کو دیے گئے انٹرویو میں میگھن مارکل کو ایک موقع پر ’بد مزاج خاتون‘ قرار دیا تھا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا یہ انٹرویو دی سن نے ان کے تین روزہ برطانوی دورے سے قبل شائع کیا تھا جس میں امریکی صدر نے اپنے برطانوی دورے کے حوالے سے بھی بات کی۔

ڈونلڈ ٹرمپ سے انٹرویو کے دوران برطانوی اخبارکے صحافیوں نے سوال کیا کہ انہیں پتہ ہے کہ ان کے تین جون سے شروع ہونے والے دورے کے دوران میگھن مارکل ان سے نہیں ملیں گی؟

صحافیوں کے سوال پر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ وہ میگھن مارکل کے نہ ملنے کی وجوہات نہیں جانتے، انہیں امید ہے کہ وہ ٹھیک ہوں گی۔

انٹرویو کے دوران صحافیوں نے امریکی صدر کو یاد دلایا کہ میگھن مارکل نے برطانوی شہزادے سے شادی کرنے سے قبل 2016 میں کہا تھا کہ اگر ڈونلڈ ٹرمپ امریکی صدارتی انتخابات میں کامیاب ہوئے تو وہ ہمیشہ کے لیے امریکا چھوڑ کر کینیڈا منتقل ہوجائیں گی۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے صحافیوں کے جواب میں کہا کہ انہیں سمجھ نہیں آ رہا کہ وہ ماضی میں دیے گئے میگھن مارکل کے کمنٹس پر کیا کہیں، ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ ’انہیں اندازہ نہیں تھا کہ میگھن مارکل اتنی بد مزاج خاتون ہیں‘۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے میگھن مارکل کے لیے انگریزی کا لفظ ’نیسٹٰی‘ استعمال کیا جس کے معنی ’غلیظ، فحش، گندی اور بدمزاج‘ ہوسکتے ہیں، یہ لفظ خصوصی طور پر خواتین کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے میگھن مارکل کو ’بد مزاج خاتون‘ قرار دیے جانے کے بعد امریکی و برطانوی میڈیا سمیت سوشل میڈیا پر امریکی صدر پر تنقید کی گئی جس کے بعد انہوں نے ٹوئیٹ کے ذریعے وضاحت کی کہ انہوں نے میگھن مارکل کو ’بد مزاج خاتون‘ قرار نہیں دیا۔

امریکی صدر نے میگھن مارکل کے لیے بولے جانے والے الفاظ کی وضاحت اپنے تین روزہ برطانوی دورے کے آغاز سے قبل کی۔ ڈونلڈ ٹرمپ 3 سے 5 جون تک برطانوی دورے پر رہیں گے اور اس دوران وہ ملکہ برطانیہ سمیت شاہی خاندان کے دیگر افراد سے بھی ملیں گے۔

رپورٹس ہیں کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے شاہی محل کے دورے کے دوران وہ میگھن مارکل کے شوہر شہزادہ ہیری سے بھی ملیں گے، تاہم ان کی اہلیہ امریکی صدر سے ملاقات کے دوران موجود نہیں ہوں گی۔

برطانوی میڈیا کے مطابق میگھن مارکل دراصل بچے کے پیدائش کے بعد تاحال چھٹیوں پر ہیں۔

تاہم ساتھ ہی یہ اطلاعات بھی ہیں کہ میگھن مارکل امریکی صدر کو سخت ناپسند کرتی ہیں جس وجہ سے وہ ان سے ملنا نہیں چاہتیں۔

میگھن مارکل خود امریکی شہری بھی ہیں اور وہ 2016 کے امریکی صدارتی انتخابات میں واضح طور پر ڈونلڈ ٹرمپ کی حریف ہلیری کلنٹن کی حمایت کر چکی تھیں اور میڈیا میں اعلان کیا تھا کہ وہ خاتون صدارتی امیدوار کو ہی ووٹ دیں گی۔

میگھن مارکل کی شادی اور ان کے ہاں پہلے بچے کی پیدائش کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ کا یہ پہلا برطانوی شاہی محل کا دورہ ہوگا۔ واضح رہے کہ میگھن مارکل کی مئی 2018 میں ہونے والی شادی میں بھی ڈونلڈ ٹرمپ کو مدعو نہیں کیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں