Daily Mashriq


سینٹ انتخابات

سینٹ انتخابات

آج 3مارچ کو سینٹ کی خالی ہونے والی 52نشستوں پر انتخابات ہورہے ہیں۔سب کو خبر ہے سب کے علم میں ہے۔کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں ہے۔

ایک خبر ہے کہ ہارس ٹریڈنگ ہونے کے امکانات ہیں۔کروڑوں کی بولیاں لگ رہی ہیں۔سیاسی لیڈران برملا اس بات کا اقرار کررہے ہیں کہ کروڑوں روپے کی آفریں ہو رہی ہیں۔جوڑ توڑ جاری ہے۔کسی کو احساس ہے کہ یہ ببانگ دہل کیا ہورہا ہے؟کوئی ہے جو اس غیر قانونی اور غیر آئینی کاروبار کو روکے۔بلکہ ایسا لگ رہا ہے کہ اس حمام میں سب ننگے ہیں۔منتخب ہونے والا اور منتخب کرانے والے سب ایک پیج پر ہیں کہ کامیابی حاصل کرنی ہے ۔سیٹ جیتنی ہے۔ کرسی تک پہنچنا مقصود ہے۔سب سیاسی آداب کو بالا ئے طاق رکھ کر ’’ دی پرنس ‘‘ کے فارمولے کو اپناتے ہوئے (By hook or by crook)اقتدار کی کرسی تک پہنچناچاہتے ہیں۔

52سینٹر ز کی ریٹائر منٹ کے بعد نئے سینٹرز کے منتخب ہونے کے بعد سیاسی پارٹیوں کی تعداد میں کافی رد و بدل کا امکان ہے۔اس بار خیبر پختونخواکی نمائندگی کرنے والے سینیٹروں میں تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے سینٹروں کا پلڑا بھاری نظر آرہا ہے۔تحریک انصاف نے بھی اُن اُمیدواروںکوٹکٹ دئیے ہیںجو مالی طور پر مستحکم ہیں اور اپنی اپنی نشستوں کو جیتنے کے لئے کافی وسائل رکھتے ہیں۔جبکہ آئندہ منتخب ہونے والے سینیٹروں میں ANPکی نمائندگی کافی محدود ہو جائیگی۔سینٹ میں سیاسی پارٹیوں کی نمائندگی میں کافی تبدیلی آسکتی ہے۔جس سے ایوان بالا میں قانون سازی کے مرحلوں پر بھی کافی فرق پڑ سکتا ہے۔اس وقت سینٹ میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کی اکثریت ہے ۔جبکہ پیپلز پارٹی دوسرے نمبر پر ہے۔لیکن مارچ کے انتخابات میں سیاسی پارٹیوں کی عددی اکثریت میں تبدیلی نظر آرہی ہے۔

پاکستان ایک وفاق ہے اور دو ایوانوں پر مشتمل ہے۔سینٹ اور قومی اسمبلی ۔سینٹ یا ایوان بالا ملک کا قانون سازی کا اعلیٰ ادارہ ہے۔جس کے ممبران آبادی کی بجائے یونٹس کی بنیاد پر منتخب ہوتے ہیں۔یہ ایک مستقل ادارہ ہے۔یہ حکومت کے جانے سے نہیں ٹوٹتا اور ’ ’ سینٹ ‘‘ مسلسل فعال رہتا ہے۔البتہ اس کے ممبران چھ سال کے لیے منتخب ہوتے ہیں۔اس وقت سینٹ میں کل ممبران کی تعداد 104ہے۔جس میں 52نشستوں پر انتخابات ہو رہے ہیں۔

ہر صوبے سے 23ممبران صوبائی اسمبلی کے ممبران منتخب کرتے ہیں۔جبکہ 4ممبران دارالحکومت اور 8ممبران قبائلی علاقوں سے منتخب کئے جاتے ہیں۔اس وقت خیبر پختونخوا کے کل 22سینٹرز سینٹ میں صوبہ کی نمائندگی کرتے ہیں۔جس میں 10 ممبران مارچ 2018 ء میں ریٹائر ہو گئے جبکہ 12سینٹرز مارچ 2021 ء کو ریٹائر ہوں گے۔

1970 ء کی اسمبلی نے ملک کو 1973 ء کا آئین دیا۔14اگست 1973 ء کو 1973 ء کا آئین نافذ ہوا۔جس کی رو سے ملک میں ایک بار پھر پارلیمانی طرز حکومت نے جنم لیا۔جبکہ اس سے قبل ایوب خان کے دور میں صدارتی طرز حکومت رائج تھا۔ 1973 ء کی آئین کے بعد ملک میں قانون سازی اور صوبوں کو برابری کی نمائندگی دینے کے لیے قومی اسمبلی اور سینٹ کا قیام عمل میں لایا گیا۔اس سے قبل 1971ء کے سانحہ ڈھاکہ کی وجہ سے سینٹ کا قیام ضروری سمجھا گیا تاکہ صوبے کو ایک یونٹ سمجھ کر برابری کی بنیاد پر بھی ایوان بالا میں نمائندگی حاصل ہو۔

حبیب اللہ خان 16گست 1973 ء سے 4جولائی 1977 ء تک سینٹ کے پہلے چیئرمین رہے۔

سینٹ ایک مسلسل فعال ادارہ ہے۔یہ کام کے لحاظ سے مکمل طور پر آزاد ہے۔ قانون سازی میں ایک اہم کردار ادا کرتا ہے۔حکومت کو درپیش چیلنجز کو احسن طریقے سے نبھانے کے لیے احکامات دیتا رہتا ہے۔

سینٹ کی تین اہم ذمہ داریاں ہیں۔ (1) قانو ن سازی (2)احتساب ،نگرانی (3) صوبوں کی وفاق میں نمائندگی اور پالیسی گائیڈ لائن ۔کوئی قانون بھی اُس وقت تک نافذ العمل نہیں ہو سکتا ہے جب تک قومی اسمبلی ، سینٹ اور صدر پاکستان کی رضامندی حاصل نہ ہو۔ ماسوائے مالیاتی بل کے ۔جس کے سارے اختیارات قومی اسمبلی کے پاس ہیں۔سینٹ 14دن کے اندر اندر سفارشات مرتب کر کے بھیج سکتا ہے۔مالیاتی بل قومی اسمبلی میں پیش کیا جاتا ہے جس کی کاپی سینٹ کو بھیجی جاتی ہے۔اگر سینٹ چاہے تو اس بل میں 14دن کے اندر اندر اپنی سفارشات مرتب کر کے قومی اسمبلی کو بھجوا سکتا ہے۔

سینٹ کے قوائد وضوابط کے اعتبار سے اس کے چارٹر میں سوائے قانون سازی اور نگرانی کے اور کوئی ذمہ داری شامل نہیں ہے۔سینٹ آف پاکستان کے بنیادی فرائض میں تمام فیڈ ریٹنگ یونٹس میں ہم آہنگی ،اتفاق ،قومی یکجہتی کو فروغ دیناشامل ہے۔خاص طور پر چھوٹے صوبوں کے تحفظات کو دور کرنا ہے۔

سینٹ کی خصوصیت یہ ہے کہ حکومت کے جانے سے اس کی حیثیت پر کوئی اثر نہیں پڑتا۔یہ اپنی جگہ قائم رہتا ہے۔ البتہ حکومت کے جانے سے صوبوں میں آئی ہوئی تبدیلی سے سینٹ کے انتخابات کے بعد نئے منتخب ہونے والے ممبران کی وجہ سے سیاسی پس منظر میں تبدیلی آ سکتی ہے اور جو پارٹی صوبوں میں برسراقتدار آتی ہیںاُس پارٹی کی اکثریت سینٹ میں واضح طور پر دیکھی جا سکتی ہے۔

متعلقہ خبریں