Daily Mashriq


ٹیکسٹ بک بورڈ کو متاثر ہونے نہ دیا جائے

ٹیکسٹ بک بورڈ کو متاثر ہونے نہ دیا جائے

ٹیکسٹ بک بورڈ کے چھ ارب روپے بی آر ٹی پر خرچ کرنے کی مساعی میں کس قدر حقیقت ہے اور کس قدر نہیں، کیا ایسا ممکن ہو پائیگا۔ ان سوالات سے قطع نظر اس طرح کی کسی ممکنہ سعی سے حکومت کیلئے گریز کرنا اسلئے بہتر ہوگا کہ چھ ارب روپے کی خطیر رقم اگر ایک مرتبہ ادارے سے لی جائے تو ٹیکسٹ بک بورڈ کا ادارہ مستقل طور پر تباہی سے دو چار ہوگا۔ اس کے نظام میں عدم فعالیت کی گنجائش نہیں کجا کہ صوبے کے سرکاری سکولوں کے لاکھوں طالب علموں کو مفت کتابیں دینے کے احسن عمل کا خاتمہ کیا جائے یا اسے متاثر کیا جائے، رقم کی موجودگی اور پوری کوشش کے باوجود سرکاری سکولوں کے طالب علموں کو بروقت درسی کتب نہ ملنے اور تاخیر سے ملنے کی شکایات عام ہیں۔ اگر اس ادارے کو وسائل سے محروم کر دیا جائے تو اس کا نظام غیر متوازن ہوگا جس سے صوبے کے سرکاری سکولوں کے لاکھوں طلبہ متاثر ہوں گے۔

متعلقہ خبریں