Daily Mashriq


جامعہ پشاورکےطلباء کا فیسوں کیخلاف احتجاج،پولیس کالاٹھی چارج

جامعہ پشاورکےطلباء کا فیسوں کیخلاف احتجاج،پولیس کالاٹھی چارج

ویب ڈیسک:جامعہ پشاورمیں فیسوں میں اضافہ پر احتجاج کرنے والے طلبہ کے خلاف پولیس کے لاٹھی چارج سے پانچ طلبہ زخمی ہو گئے۔

پشاوریونیورسٹی کےطلباء فیسوں میں میں کمی کیلئے وائس چانسلر کے دفترکےسامنے اپنااحتجاج ریکارڈ کرانےکیلئے اگے بڑھے تو یونیورسٹی انتظامیہ کے حکم پر پولیس نے طلباء کومنتشرکرنےکیلئےلاٹھی چارج  کااستعمال کیا جس کےدوران 5طلبا جبکہ طلباء کی جانب سے  پتھراوسے 2پولیس اہلکار زخمی ہوگئے۔ طلبا کاکہناہے کہ فیسوں میں اضافے کا اعلان واپس لینے کا مطالبہ کیا لیکن انتظامیہ نے ہماری بات نہیں سنی۔ خیبرپختونخوا حکومت کےترجمان  شوکت یوسفزئی کا کہنا تھا کہ انہیں معاملہ پرافسوس ہے فیسوں میں اگر اضافہ ہوا ہے تو یہ یونیورسٹی کا داخلی معاملہ ہے تاہم حکومت  طلباء سےمذاکرات کیلئےتیارہے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے جامعہ پشاور کےطلباء پر تشدد کی مذمت کی انکاکہناتھاکہ پرامن احتجاج  طلباء کا جمہوری حق ہے  گرفتار طلباء کو رہا کرکے ان کے مطالبات حل کیے جائیں۔پشاور یونیورسٹی کےطلباء پرتشددکےواقعےپرسابق صدرآصف زرداری کا کہناتھا کہ  مستقبل کےمعماروں پر تشددکرنا افسوسناک ہے، طلباء پرتشدد سےسفاک تبدیلی کاپردہ چاک کردیادھرناکرنےوالوں سے پرامن مظاہرے   برداشت نہیں ہوتے۔

عوامی نینشل پارٹی کےرہنما سردار حیسن بابک یونیورسٹی  طلباء پر تشدد کو مذمت قراردیتےہوئے کہناتھا کہ پُرامن احتجاج کا راستہ روکنا امرانہ سوچ ہے یونیورسٹی انتظامیہ طلباء تنظیموں کو بٹھاکر ان کے مسائل سنے۔

 

متعلقہ خبریں