Daily Mashriq


رحمان باباکاگائوںدیہہ بہادرحکمرانوںکی نظروںسے اوجھل ہوگیا

رحمان باباکاگائوںدیہہ بہادرحکمرانوںکی نظروںسے اوجھل ہوگیا

پشاور(سید شبیر شاہ ) پچاس ہزار سے زائد آبادی والی یونین کونسل دیہہ بہادر کی تینوں نیبرہوڈ کونسلز بنیادی سہولیات سے محروم ہیں،علاقے میں پینے کا صاف پانی ناپید ہے جبکہ ٹیوب ویل خراب ہونے کی وجہ سے لوگ دوردرازسے پانی لانے پر مجبور ہیں، گیس اور بجلی کی لوڈ شیڈنگ نے لوگوں کی چیخیں نکال دی ہیں، بھانہ ماڑی تھانے کی حدودمیں موجود علاقہ دیہہ بہادر جرائم کی آماجگاہ بن گیا ہے ۔علاقے میں منشیات فروش کھلے عام نوجوانوں کی زندگیوں سے کھیلنے لگے ہیں۔ اس حوالے سے مشرق ٹی وی فورم میں بات کرتے ہوئے علاقہ کے ایک بزرگ نے بتایاکہ علاقے میں رات کے وقت اندھادھند ہوائی فائرنگ معمول ہے ۔ دیہہ بہادر تھانہ بھانہ ماڑی کی حدود میں آتا ہے جو کہ علاقے سے کافی دور ہے جبکہ مکین علاقے میں پولیس چوکی بنانا چاہتے تھے لیکن سیاسی اختلافات اور شاملات کی زمین پر تنازعہ ہونے کی وجہ سے آج تک پولیس چوکی نہیں بن سکی ۔ فورم میں گفتگو کرتے ہوئے مکین متعلقہ محکموں کی نااہلی اور ناکامی پر پھٹ پڑے ۔ ایک شہری کاکہناتھا کہ یونین کونسل کی تینوں نیبر ہوڈ کونسلز اچر 1 ،اچر2 اور دیہہ بہادر کے ہر گھر میں پیسکو بھاری بل اور جرمانے تو ضرور بھیجتی ہے لیکن مکینوں کو سہولیات دینے سے عاری ہے۔ایک اور شہری نے بتایاکہ محلہ رحمان کوٹ میں 11 ہزار کی لائن گھروں کے اوپر سے گزرتی ہے جس کی وجہ سے اب تک تین لوگوں کی موت ہوچکی ہے لیکن شکایات کے باوجود متعلقہ ایس ڈی او اور ایکسین کارروائی کرنے سے قاصر ہیں ۔ اٹھارہ گھنٹے بجلی اور گیس کی لوڈ شیڈنگ معمول ہے جبکہ بل اتنے زیادہ ہیں کہ علاقے کے سفید پوش لوگ بل ادا کرتے کرتے قرض دار ہوگئے ہیں ۔ایک نوجوان کا کہنا تھا کہ یونین کونسل کا علاقہ شیدا آباد وخو پل کے مکین صاف پانی کو ترس گئے ہیں۔ پچاس سے ساٹھ گھر صبح سویرے پانی بھرنے دور کے علاقوں میں جاتے ہیں ۔ مکینوں کا کہنا تھا کہ پشتو صوفی شاعر رحمان بابا نے آج سے تین سو سال پہلے اسی گائوں میں بیٹھ کر اپنی شاعری کے ذریعے مغل حکمرانوں کو مخاطب کرتے تھے اور ان کا ہر پیغام مغلوں تک پہنچ جاتا تھا لیکن تخت پشاور پر براجمان آج کے حکمران دیہہ بہادرجیسی تاریخی جگہ کے مسائل سے بے خبر ہیں۔ مکینوں کا کہنا تھا کہ عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کو ووٹ دیا تھا لیکن ایم این اے اور ایم پی اے نے نشست جیتنے کے بعدحلقے کو بھلا دیا ہے ۔ پروگرام میں شریک ڈبلیو ایس ایس پی کے زون سی کے مینجر واٹرسپلائی منیب کا کہنا تھا کہ دیہہ بہادر میں ان کے پاس 12ٹیوب ویل ہیں اور سب کے سب فنکشنل ہیں جبکہ شیدا آباد وخو پل میں لوگوں کی شکایات ان کو موصول ہوئی ہیں ان کا کہنا تھا کہ پچاس سے ساٹھ گھروں کو پانی اس وجہ سے نہیں مل رہا کیونکہ اس پائپ کو انہوں نے خود کاٹا ہوا ہے ۔ یونین کونسل دیہہ بہادر میں صفائی کی صورتحال پر گفتگو کرتے ہوئے مینجر سالیڈ ویسٹ عسکر کا کہنا تھا کہ یونین کونسل میں ان کے پاس 44 کا سٹاف ہے جبکہ 24 کنٹینرز ہیں جبکہ علاقے میں صفائی کے حوالے سے کوئی بھی شکایت ہو تو مکین ہماری ہیلپ لائن نمبر پر کال کرسکتے ہیں جس کو فوری طور پر حل کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں