Daily Mashriq

سرکاری سکولوں میں زیر تعلیم37ہزار بچے مختلف جسمانی معذوری میں مبتلا

سرکاری سکولوں میں زیر تعلیم37ہزار بچے مختلف جسمانی معذوری میں مبتلا

پشاور(نیوزرپورٹر)خیبر پختونخوا کے سرکاری سکولوں میں مختلف جسمانی عوارض کا شکار37ہزار سے زائد بچوں کی نشاندہی کردی گئی ہے سب سے زیادہ بچے سوات کے سکولوں میں جبکہ دیرپائیں ، صوابی اور پشاور کے سرکاری سکولوں میں بھی مختلف مسائل کا شکار بچوں کی تعداد دیگر اضلاع سے زائد ریکارڈ کی گئی ہے ذرائع کے مطابق خیبر پختونخوا کے سرکاری سکولوں میں بچوں کی جسمانی اور ذہنی کیفیت سے متعلق سروے میں معلوم ہوا ہے کہ صوبے کے سرکاری سکولوں میں قوت گویائی، بصارت ،سماعت ،ہاتھ اور پیر میں لنگڑاہٹ اور ذہنی اور نفسیاتی مسائل سے دوچار37ہزار15بچوں کی نشاندہی کی گئی ہے ذرائع نے بتایا کہ مذکورہ بچے عام اور جزوی طور پر ان مسائل میں مبتلا ہیں سب سے زیادہ بچے سوات کے سکولوں میں3ہزار3سو72بچے، صوابی میں26سو سے زائد، دیر پائیں میں27سو سے زائد،ایبٹ آباد میں1939 اور پشاور میں 23سو سے زائد ایسے بچے ہیں جنہیں مختلف جسمانی معذور پن کا سامنا ہے محکمہ ابتدائی،ثانوی اور اعلیٰ ثانوی تعلیم کے ذرائع نے بتایا کہ مانسہرہ میں21سو سے زائد، دیر بالا میں18سو سے زائد جبکہ ملاکنڈ میں13سو سے زائد ایسے بچوں کی نشاندہی کی گئی ہے۔

متعلقہ خبریں