امریکا کی جانب سے کوئِی ڈو مور کا مطالبہ نہیں کیا گیا،وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی

06 ستمبر 2018 (00:13)

ویب ڈیسک:امریکا نے ڈومور کا نہیں بلکہ تعلقات میں بہتری کا تاثر دیا ہے،امریکی وفد کے ساتھ امداد کے حوالے سے کوئی بات چیت نہیں کی گئی،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی۔

وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی کا امریکی وفد سے ملاقات کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ملکی موقف کا دفاع میری ذمہ داری ہے۔ ہم نے امریکا کے سامنے حقیقت پسندانہ موقف نہایت بردباری، خودداری اور ذمہ داری سے پیش کیا۔ آج کی نشست سے یہ پیغام گیا کہ پاکستان کی عسکری اور سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ امریکا نے افغانستان کے معاملے پر اپنی پالیسی کا ازسر نو جائزہ لیا، ڈومور نہیں بلکہ پاکستان کے ساتھ تعلقات میں بہتری کا تاثر دیا ہے، امریکا اب اس نتیجے پر پہنچا کہ افغانستان کا حل سیاسی ہے۔

وزیرِ خارجہ نے اس امید کا اظہار کیا کہ پاکستان اور امریکا ایک مرتبہ پھر ایک دوسرے کے قریب آئیں گے، پاک امریکا تعلقات میں پیشرفت سچائی کی بنیاد پر ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ امریکی وزیرِ خارجہ نے دورہ کی دعوت دی اقوام متحدہ میں اجلاس میں شرکت کیلئے امریکا کا دورہ کروں گا، ہماری اگلی نشست واشنگٹن میں ہوگی۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور افغانستان کا مستقبل ایک دوسرے سے جڑا ہوا ہے جبکہ دیگر ہمسایہ ممالک سے بھی بہتر تعلقات کے خواہاں ہیں، ہمارا پیغام امن، استحکام اور ترقی ہے۔ افغانستان میں امن واستحکام کیلئے مثبت کردار ادا کرینگے،میرا پہلا دورہ افغانستان کا ہو گا۔

مزیدخبریں