Daily Mashriq


نقطہ چینی کرنے والوں کو اپنے گریبان میں جھانکنا چاہیے،وزیراعظم شاہد خاقان عباسی

نقطہ چینی کرنے والوں کو اپنے گریبان میں جھانکنا چاہیے،وزیراعظم شاہد خاقان عباسی

ویب ڈیسک:ایمسنٹی سکیم پر تنقید کرنے والے پہلے یہ بتائیں کہ کیا وہ تیکس ادا بھی کرتے ہیں؟وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی۔

خاران میں تقریب سے خطاب کے دوران وزیر اعظم شاہد خاقان کا کہنا تھا کہ نواز شریف ترقی کا دوسرا نام ہے، ترقی جھوٹے وعدوں سے نہیں ہوتی، بلوچستان معدنی وسائل سےمالامال صوبہ ہے، 2013 سے پہلے بلوچستان میں بڑے بڑے منصوبے التوا کا شکار تھے، مسلم لیگ (ن) نے بلوچستان کی ترقی کیلئے بے مثال  عمی اقدامات کیے ، ہم نے ہمیشہ اس علاقے میں ترقی کی کوشش کی جس کو ضرورت ہو، آج بلوچستان میں بہترین شاہراہوں کا جال بچھایا جارہاہے، وہ وقت دور نہیں جب بلوچستان ملک کا امیر ترین صوبہ ہوگا۔

شاہد خاقان عباسی نے مزید کہا کہ پاکستان میں جمہوریت ہے اور رہے گی، ملک میں امن کے لیے فوج نے اپنی بھرپور کوششیں کیں اور قربانیاں دیں، جس کی وجہ سے ملک میں قیام امن کے ساتھ ترقی کی راہ ہموار ہوئی، ہمارا مقصد ملک کی ترقی کو جاری رکھنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جولائی میں آئندہ 5 سال کے لیے پاکستان کے مستقبل کا فیصلہ ہوگا،اس وقت ملک میں ایک طرف الزامات اور دوسری طرف سچ اور خدمت کی سیاست ہے، گالیوں کی سیاست کو پاکستان کے عوام رد کرچکے ہیں اور جولائی میں بھی رد کریں گے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ وسائل کے بغیر ترقی ممکن نہیں ، وسائل کے لیے ٹیکس اصلاحات لائی جارہی ہیں، مسلم لیگ (ن)کی حکومت نے ٹیکس شرح کو آدھے سے بھی کم کردیا ہے ، ہم نے ٹیکس شرح کم کی تاکہ لوگ انکم ٹیکس اداکریں، یقین سے کہہ سکتا ہوں کہ نقطہ چینی کرنے والوں کا ٹیکس ادائیگی کا کوئی ریکارڈنہیں ہوگا۔

متعلقہ خبریں