Daily Mashriq

پاکستان کاایشیائی ملکوں کے درمیان اتحاد کے فروغ پر زور

پاکستان کاایشیائی ملکوں کے درمیان اتحاد کے فروغ پر زور

قومی اسمبلی کے سپیکر اسد قیصر نے ایشیائی ملکوں کے درمیان اتحاد کے فروغ پر زور دیا ہے تاکہ موجودہ صدی کو حقیقی معنوں میں ایشیا کی صدی میں تبدیل کیا جاسکے۔وہ قطر کے دارلحکومت دوحہ میں بین الپارلیمانی یونین کے پینتیس رکنی ایشیا بحرالکاہل گروپ کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے۔اسد قیصر نے ایشیائی ملکوں کو درپیش مسائل کے حل کیلئے مشترکہ حکمت عملی اختیار کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔سپیکر نے اس سال پندرہ مارچ کو کرائسٹ چرچ میں مسجد پر دہشتگردانہ حملے کے واقعے پر نیوزی لینڈ کے عوام اور پارلیمنٹ سے تعزیت کی۔انہوں نے ایشیائی ملکوں کے قانون ساز اداروں کے درمیان باقاعدہ اور مسلسل رابطوں کو یقینی بنانے کیلئے پارلیمانی سفارتکاری کی پالیسی بروئے کار لانے کی اہمیت بھی واضح کی تاکہ دنیا بھر خصوصا براعظم ایشیا میں دہشتگردی، غربت، نسل پرستی، تہذیبوں کے درمیان تصادم جیسے مسائل سے نمٹنے کیلئے بہتر افہام وتفہیم کو فروغ دیا جاسکے جو پائیدار انسانی ترقی کو بری طرح متاثر کررہے ہیں۔سپیکر قومی اسمبلی نے ایشیا بحرالکاہل گروپ کے صدر کی حیثیت سے اس سلسلے میں کسی بھی کوشش کیلئے پاکستان کی جانب سے مکمل حمایت کی یپشکش کی۔اس گروپ کے اجلاس میں جوافتتاحی تقریب سے پہلے منعقد ہوا، پانچ اہم اور ہنگامی نوعیت کے مسائل پر تفصیلی غور کیا گیا جن میں نسل پرستی، اسلام کے خلاف معاندانہ رویے کی روک تھام، دنیا بھر میں مسلمان اقلیتوں کے تحفظ، فلسطینیوں کی حالت زار میں بہتری اور افریقی ملکوں موزمبیق، ملاوی اور زمبابوے میں سمندری طوفان کے بعد پیدا ہونے والے انسانی بحران سے نمٹنے کیلئے ہنگامی امداد کی فراہمی کے معاملات شامل تھے۔

اس سے پہلے قومی اسمبلی کے سپیکر اسد قیصر بین الپارلیمانی یونین کے پینتیس رکنی ایشیا بحرالکاہل گروپ کے اجلاس کی صدارت کیلئے دوحہ پہنچے۔ پاکستان کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ پاکستان کو ایشیا بحرالکاہل کے اہم جغرافیائی سیاسی گروپ کی صدارت کیلئے منتخب کیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں