Daily Mashriq

معروف مذہبی اسکالراورنعت خوان جنیدجمشیدکی تیسری برسی

معروف مذہبی اسکالراورنعت خوان جنیدجمشیدکی تیسری برسی

جیند جمشید 7 دسمبر 2016ء کو پی آئی اے کے اس طیارے میں سوار تھے جو چترال سے اسلام آباد آتے ہوئے حادثے کا شکار ہوا۔ حادثے میں طیارے کے عملے سمیت 48 افراد جاں بحق ہوئے۔

موسیقی سے سفر شروع کرنے والے جنید جمشید کی زندگی کا اختتام ایک مذہبی اسکالر اور نعت خواں کی پہچان کے ساتھ ہوا۔

یہ جیند جمشید کا خاصا ہی تھا کہ سال 1987 میں ان کا گایا ہوا گیت “دل دل پاکستان” دنیا کے ہر کونے میں بسنے والے پاکستانی کیلئے ایک ترانے کی حیثیت اختیار کرگیا۔ صرف یہ ہی نہیں جیند کے دیگر گیتوں نے بھی انہیں شہرت کی معراج پر پہنچا دیا۔

بعد ازاں اسلام اور مذہبی تعلیمات کی طرف رجحان نے جنید جمشید کو بالکل ہی بدل ڈالا اور ان کی پہچان سنگر سے بدل کر نعت خواں کی ہوگئی۔ جیند جمشید زندگی کے آخری لمحوں تک اسلامی تعلیمات اور نعت خوانی کے فرائض انجام دیتے رہے۔ وہ معروف مذہبی اسکالر طارق جمیل کے بھی بہت قریب تھے۔

متعلقہ خبریں