Daily Mashriq

ایف آئی اے نےسیکڑوں افرادکی زندگی خطرےمیں ڈال دی

ایف آئی اے نےسیکڑوں افرادکی زندگی خطرےمیں ڈال دی

یف آئی اے نے انسانی اسمگلنگ میں ملوث انتہائی مطلوب ملزمان کی ریڈ بک جاری کر دی۔ ایک سو اشتہاریوں کی فہرست میں پانچ خواتین بھی شامل ہیں جن میں انیس افراد کو دھرلیا گیا جبکہ شکایت کرنے والوں کی تفصیلات منظر عام پر لاکر ان کی زندگی بھی خطرے میں ڈالی گئی ہے۔

 ایف آئی اے کی یڈ بک میں شامل دو کا تعلق لاہو، دو کا اسلام آباد اور ایک کا تعلق کراچی سے ہے۔

 دوسری جانب ایف آئی اے نے شکایت کرنے والوں کے نام صیغہ راز میں رکھنے کے بجائے پوری ریڈ بک ویب سائٹ پر اپ لوڈ کردی جن میں ملزمان کی پوری تفصیل دستیاب نہیں لیکن شکایت کرنے والوں کا نام اور پتہ سب درج ہے، جس سے ان کی زندگی کو خطرہ ہوسکتا ہے۔

 نائب صدر سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن اورنگزیب اسد ایڈوکیٹ کا کہنا ہے کہ انسانی اسمگلرز بہت بڑے بدمعاش اور مافیا ہوتے ہیں۔ اگر ذمہ دار شہری نے ایک گینگ کیخلاف آواز اٹھائی ہے تو اُس کا نام ریڈ بک میں شامل کرکے اس کو آپ ایکسپوز ر رہے ہیں۔ قانون میں اسکی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

 عالمی ادارے کی رپورٹ کے مطابق دس سال کے دوران ایک لاکھ سے زائد پاکستانی یورپ کے مختلف شہروں میں غیر قانونی طریقے سے داخل ہوئے۔ جن میں سے زیادہ تر نے بُحیرہ روم کا زمینی یا سمندری روٹ اپنایا۔

 ایف آئی اے نے لوگوں کی شکایتوں پرانیس اسمگلرز پکڑے۔ بڑے ملزمان یا ڈنکرز اب بھی آزاد ہیں۔

متعلقہ خبریں