Daily Mashriq

اسلام آباد: باپ نے ڈیڑھ سالہ بیٹے کو ’شور مچانے پر قتل‘، بیٹی کو زخمی کردیا

اسلام آباد: باپ نے ڈیڑھ سالہ بیٹے کو ’شور مچانے پر قتل‘، بیٹی کو زخمی کردیا

فاقی دارالحکومت کے علاقے بلال ٹاؤن ایک شخص نے شور مچانے پر مبینہ طور پر اپنے ڈیڑھ سالہ بیٹے کو قتل جبکہ ڈھائی سالہ بیٹی کو زخمی کردیا۔

اسلام آباد میں پیش آنے والا یہ واقعہ اس وقت منظرِ عام پر آیا جب پمز ہسپتال میں تعینات ایک خاتون نرس نے پولیس میں شکایت درج کروائی۔

خاتون کی شکایت کے مطابق ان کے شوہر نے اپنے بیٹے کو قتل جبکہ بیٹی کو زخمی کردیا۔

خاتون کے بھائی سلیم مسیح نے بتایا کہ ان کی بہن 6 جون کو ہسپتال گئی تھی اور جب وہ وہاں سے واپس آئی تو دیکھا بچے گھر میں موجود نہیں۔

جس پر انہوں نے اپنے شوہر سے بچوں کی گمشدگی کے بارے میں پوچھا لیکن اس نے کوئی جواب نہیں دیا۔

جس پر خاتون نے خود بچوں کو ڈھونڈنا شروع کردیا اور پڑوسیوں سے بھی ان کے بارے میں پوچھا، تلاش کے دوران انہوں نے بچے گھر کی چھت پر مل گئے۔

دونوں بچے ہوش میں تھے لیکن ان کے بیٹے کی دل کی دھڑکن نارمل نہیں تھی اور ان کے جسموں پر تشدد کے نشانات تھے، خاتون کے بھائی نے بتایا کہ بچوں کی حالت دیکھ کر خاتون انہیں ہسپتال لے کر گئیں جہاں ان کے بیٹے کو مردہ قرار دے دیا گیا۔

سلیم مسیح کے مطابق ان کے بہنوئی گزشتہ چند ہفتوں سے بے روزگار تھے، تاہم پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کر کے ملزم کو گرفتار کرلیا۔

اس بارے میں جب تفتیشی افسر انیس اکبر سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ ابتدائی تفتیش میں ہی ملزم نے اپنے بچے کے قتل کا اعتراف کرلیا۔

پولیس کے مطابق ملزم کا کہنا تھا کہ وہ شراب کے نشے میں تھا اور بچے شور مچا رہے تھے جس سے اسے غصہ آگیا اسے نے بچوں کو خاموش رہنے کے لیے کہا لیکن وہ چپ نہیں ہوئے۔

متعلقہ خبریں