Daily Mashriq

ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کا بڑا کارنامہ

ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کا بڑا کارنامہ

پاکستان کے لیے خوشی کی خبر،ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے پروفیسرز اور ماہرین  نے اہم سنگ میل عبور کرلیا۔ 

تفصیلات کے مطابق ڈاو یونیورسٹی آف ہیلتھ ساینسز کے پروفیسرز اور ماہرین   کی ٹیم نے بڑا کارنامہ انجام دیتے ہوئےاینٹی اسنیک وینم کی تیاری کا ایک اہم مرحلہ طے کرلیا۔ 

ڈاؤ انسٹیٹیویٹ آف لائف سائنسز کے ڈائریکٹرز ڈاکٹر طلعت رومی اور ڈاکٹر شوکت علی نےاوجھاکیمپس میں مشترکہ بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ این آئی ایچ اسلام آباد کے بعد اب ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز بھی سانپ کے زہر کو ختم کرنے کی ویکسین تیار کرسکے گی۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی پاکستان (ڈریپ ) کو لائسنس کے لیے درخواست فراہم کر دی ہے ۔ڈریپ سے منظوری کے بعد آئندہ سالوں میں ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز پورے پاکستان کی کھپت پوری کرسکے گی۔ 

ماہرین نے بتایا کہ سانپ کے زہر کوختم کرنے کی ویکیسن کا کامیاب تجربہ مکمل کر لیا گیا ہے جس کے چوہوں اور گھوڑوں پر کامیاب تجربات کیے گئے ہیں۔ 

خیال رہے کہ پاکستان میں سالانہ 40 ہزار سے زائد افراد اسنیک بائٹ کا شکار ہوتے ہیں جس کے باعث تقریباً 10 ہزار سے زائد افراد جان کی بازی ہار جاتے ہیں۔ 

پاکستان سالانہ 50 ہزار اے ایس وی وائلز درآمد کرتا ہے۔

متعلقہ خبریں