Daily Mashriq

ترکی اور روس نے امریکا ایران کشیدگی پر مشترکہ بیان جاری کر دیا

ترکی اور روس نے امریکا ایران کشیدگی پر مشترکہ بیان جاری کر دیا

استنبول: ترکی اور روس نے ایک مشترکہ بیان میں امریکا اور ایران سے تحمل کے مظاہرے کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق استنبول میں مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ترکی کے صدر رجب طیب اردوان اور روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے مشترکہ بیان میں امریکا اور ایران سے مطالبہ کیا کہ وہ تحمل سے کام لیں۔

ترکی روس مشترکہ بیان میں کہا گیا کہ امریکا اور ایران بحران کو بڑھنے نہ دیں، حملوں کے تبادلے سے خطے میں عدم استحکام کا نیا دور شروع ہو جائے گا، ہم خطے میں جاری کشیدگی میں کمی کے لیے پر عزم ہیں، فریقین تحمل کا مظاہرہ کریں اور سفارت کاری کو ترجیح دیں۔

دونوں رہنماؤں کے مشترکہ تحریری بیان میں میزائل حملوں کی بھی مذمت کی گئی، بیان میں امریکی ڈرون حملے میں ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت پر تنقید کرتے ہوئے کہا گیا کہ اس عمل سے خطے کی سلامتی اور استحکام کو خطرہ لاحق ہوا، بیان میں بدھ کے روز امریکی ملٹری بیس پر میزائل حملوں پر تہران پر بھی تنقید کی گئی۔

روس اور ترکی کے مابین گیس پائپ لائن افتتاح سے خطے میں علاقائی تعاون کو مضبوط بنانے کا ایک نیا اشارہ ملا ہے، دونوں صدور نے اس موقع پر خطے میں ایران اور امریکا کشیدگی میں اضافے پر گہرے دکھ کا اظہار کیا۔ بیان میں کہا گیا کہ اس کشیدگی سے عراق پر نہایت منفی اثرات مرتب ہوں گے۔

متعلقہ خبریں