Daily Mashriq

اداروں کے خلاف سوچی سمجھی سازش کامیاب نہیں ہوگی، وزیر اعظم

اداروں کے خلاف سوچی سمجھی سازش کامیاب نہیں ہوگی، وزیر اعظم

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ اداروں کے خلاف سوچی سمجھی سازش کامیاب نہیں ہوگی اور ساری اپوزیشن جماعتیں اکٹھی بھی ہو جائیں تو آئین اور قانون کی عملداری پر ‏سمجھوتہ نہیں ہوگا۔

وزیر اعظم سے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے نائب صدر بابر اعوان نے وزیر اعظم ہاؤس میں ملاقات کی۔

ملاقات میں ملکی ‏سیاسی صورتحال پر گفتگو کی گئی جبکہ بابر اعوان نے مختلف امور پر آئینی اور قانونی ‏رائے سے وزیر اعظم کو آگاہ کیا۔

ملاقات کے دوران وزیر اعظم نے ایک بار پھر احتساب کے عمل میں تیزی لانے کے عزم ‏کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ احتساب کا نہ رکنے والا عمل اپنے منطقی انجام کو پہنچے ‏گا۔

انہوں نے کہا کہ اداروں کے خلاف سوچی سمجھی سازش کامیاب نہیں ہو گی جبکہ ساری اپوزیشن جماعتیں بھی اکٹھی ہو جائیں تو آئین اور قانون کی عملداری پر ‏سمجھوتہ نہیں ہوگا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ملکی معیشت کے استحکام کا وقت شروع ہو ‏چکا ہے، تمام توجہ ‏ملکی اداروں میں بہتری اور اصلاحات پر ہے، پاکستان تیزی سے بحرانی کیفیت سے ‏نکل رہا ہے اور قوم کو جلد اچھی خبریں ملیں گی۔

حکومت کا غربت سروے از سر نو کرانے کا فیصلہ

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت 'احساس اسٹیرنگ کمیٹی' کا پہلا اجلاس منعقد ہوا۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ موجودہ حکومت کی جانب سے شروع کیا جانے والا 'احساس' پروگرام جہاں ملکی تاریخ کا سب سے مفصل پروگرام ہے، وہاں اس پروگرام کا مقصد ریاست کی جانب سے معاشرے کے کمزور طبقات اور ضرورت مند افراد کی ضروریات کو پورا کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں سماجی تحفظ کے حوالے سے وفاقی اور صوبائی پروگراموں میں باہمی ربط اور تعاون کا فقدان رہا جس کے نتیجے میں جہاں ایک طرف وسائل کا ضیاع سامنے آیا، وہیں بسا اوقات حقدار بھی اپنے حق سے محروم رہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ غربت کے حوالے سے اب تک موجود اعداد و شمار خصوصاً غربت سروے پر مختلف حلقوں کے تحفظات کو مدنظر رکھتے ہوئے موجودہ حکومت نے غربت کے سروے کو از سر نو کرانے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ غربت کے حوالے سے صحیح اعداد و شمار مرتب کیے جا سکیں۔

متعلقہ خبریں