وفاق کی مضبوطی کیلئےاختیارات کی نچلی سطح پر تقسیم ضروری ہے،عمران خان

وفاق کی مضبوطی کیلئےاختیارات کی نچلی سطح پر تقسیم ضروری ہے،عمران خان

ویب ڈیسک:تین تین بار حکومت میں باری کرنے والے اب انقلاب کی باتیں کر رہےہیں،چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان۔

جنوبی پنجاب صوبہ محاز کے پی ٹی آئی میں ضم ہونے کے موقع پر مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ جنوبی پنجاب کو صوبہ بنانا میرا عزم ہے اور آئندہ انتخابات میں کسی جماعت سے اتحاد کا ارادہ نہیں، صرف خیبرپختون خوا میں مولانا سمیع الحق کی جماعت سے اتحاد ہے۔

عمران خان نے کہا کہ خلائی مخلوق کا پتہ چلانے کےلیے اصغر خان کیس کھول لیں، بلکہ اب تو کیس کھل گیا ہے، پتہ چل جائے گا کہ لاڈلا کون ہے، خلائی مخلوق نے مہران بینک سے پیسے لیے، نواز شریف کو 35 لاکھ روپے ملے، شہباز شریف اور جاوید ہاشمی نے بھی پیسے لیے، اصغر خان نے کیس کیا تو لاڈلے کے کیس ہونے میں شامل ہونے کی وجہ سے کیس نہیں کھولا گیا، نواز شریف تاجر سے سیاست دان بنے ہیں وہ سمجھتے ہیں باقی بھی انہی کی طرح ہیں۔

 چیرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ تین تین بار باریاں لینے والے انقلاب کی باتیں کرتے ہیں، پنجاب میں سب کچھ وزیراعلیٰ کنٹرول کرتا ہے، مقامی حکومت کو اختیار نہیں، سرمایہ کاری رائے ونڈ میں کی جاتی ہے، جنوبی پنجاب کو صوبہ بنانے کا وعدہ کیا ہے یہ میرا عزم ہے، فاٹا کو بھی خیبرپختون خوا میں ضم کریں گے، فاٹا والے پاکستان میں یتیم بن گئے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ قیقی بااختیار بلدیاتی نظام ہی پاکستان کے مسائل کا حل ہے، وفاق کو مضبوط کرنے کے لیے اختیارات کی نچلی سطح پر تقسیم ضروری ہے، کراچی میں بااختیار میئر نہیں اس لیے وہاں کا برا حال ہے، پانی ہے نہ صفائی۔ گندگی کے ڈھیر لگے ہیں۔

متعلقہ خبریں