سابق چیف جسٹس افتخار چودھری پرویزمشرف سے ہاتھ ملانے کو تیار تھے،چودھری شجاعت حسین

سابق چیف جسٹس افتخار چودھری پرویزمشرف سے ہاتھ ملانے کو تیار تھے،چودھری شجاعت حسین

ویب ڈیسک:مسلم لیگ (ق) کے صدر چودھری شجاعت حسین نے اپنی کتاب ’سچ تو یہ ہے‘ میں کئی رازوں پر سے  پردہ اٹھادیا۔

سابق حکمران جماعت مسلم لیگ (ق) کے صدر چودھری شجاعت حسین نے انکشافات پر مبنی کتاب  میں لکھا کہ 2008 کا الیکشن فکس تھا اور امریکا بے نظیر بھٹو (مرحومہ) کو وزیراعظم دیکھنا چاہتا تھا۔

چودھری شجاعت نے انکشاف کیا کہ اس وقت کے وزیراعظم میرظفر اللہ خان جمالی کو سستی اور کاہلی کی وجہ سے وزارت عظمیٰ سے ہٹایا گیا، اس وقت کے صدر پرویز مشرف سے  افتخار چودھری کی شکایت وزیر اعظم  شوکت عزیز نے کی تھی جبکہ چیف جسٹس افتحار چودھری قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے پرویز مشرف سے صلح کرنے کو تیار تھے۔

کتاب کی رونمائی کے لیے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ اپنی کتاب میں جو کچھ کانوں سے سنا،آنکھوں سے دیکھا اور ہونے والے اقدامات کو من و عن تحریر کردیا۔

متعلقہ خبریں