Daily Mashriq

پارسی قبرستان کی چاردیواری ٹوٹ پھوٹ کاشکار،قبضہ مافیاسرگرم

پارسی قبرستان کی چاردیواری ٹوٹ پھوٹ کاشکار،قبضہ مافیاسرگرم

پشاور ( صابر شاہ ہوتی) پشاور میں پارسی مذہب کے آخری نشان بھی مٹنے لگے ہیں۔ کینٹ میں ایک صدی سے زائد عرصہ سے بنے پارسی قبرستان کی چار دیواری ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے ۔ تاریخی قبرستان نشئیوں کے اڈے اور گندگی کے ڈھیر میںتبدیل ہوچکا۔ ماضی میں پشاور میں پارسی مذہب کے لوگ آباد تھے اور وہ کینٹ قبرستان میں میتیں دفنایاکرتے تھے ۔ اب بھی بڑی تعداد میںاسی قبرستان کے اندر قبریں پختہ حالات میں موجود ہیں۔ کینٹ میں واقع پارسیوں کے قبرستان کی چار دیواری ٹوٹ پھوٹ کی وجہ سے ہر گزرتے دن کے ساتھ قبرستان کی چار دیواری کی مسماری میں اضافہ ہو تا جا رہا ہے اور آہستہ آہستہ دیوار کی اینٹیں غائب ہو رہی ہیں۔ انکشاف ہوا ہے کہ قبرستان کی مسماری کے پیچھے قبضہ مافیا سرگرم ہے جو قبرستان کو کوڑے کے ڈھیر میں تبدیل کر رہی ہے تاکہ حکومتی آنکھ سے محفوظ رہ کر اس پر قبضہ جمایا جا سکے ۔ لیکن انتظامیہ قبرستان کو محفوظ بنانے اور چاری دیواری کی تعمیر پر لمبی تان کر سو رہی ہے ، پارسی خاندان کا قبرستان کنٹونمنٹ بورڈ کے ریکارڈ کے مطابق پلاٹ نمبر 323/CBسروے نمبر 514پارسی قبرستان کیلئے مختص کی گئی ہے لیکن اب انتظامیہ کی لا علمی کی وجہ سے قبرستان کی دیوار مسمار ہو رہی ہے اور کچھ ہی عرصہ میں چار دیواری مکمل طور پر منہدم ہو جائے گی مقامی آبادی کے مطابق ماضی میں پارسی مذہب کے لوگ پر اپنے پیاروں کی میتیں دفنایا کرتے تھے اور اکثر یہاں آیا بھی کرتے تھے جو اب ماضی کا حصہ ہو گئے ہیں ۔

متعلقہ خبریں