Daily Mashriq


 شام کے معاملہ میں براہ راست شامل نہیں ہو ناچاہتے،وزیرخارجہ

شام کے معاملہ میں براہ راست شامل نہیں ہو ناچاہتے،وزیرخارجہ

ویب ڈیسک:مشرف دور میں پاکستانی شہریوں کو پیسوں کے عوض امریکا کے حوالے کیا گیا،وزیرخارجہ خواجہ آصف۔

قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران سوالوں کے جواب دیتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ افغان کیمپوں کو دہشت گردی کیلئے استعمال نہیں ہونے دیں گے، ہم افغان مہاجرین کی واپسی عزت اور وقار کے ساتھ کرنا چاہیں گے، ہر سال تین سے چار لاکھ افغان مہاجرین کی واپسی ممکن بنائیں گے۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی امریکی ایئرپورٹ پر جامہ تلاشی کے بارے میں پوچھے گئے سوال پر خواجہ آصف نے کہا کہ وزیراعظم نجی دورے پر امریکا گئے تھے، وہ قانون کے تابع رہنے کو ترجیح دیتے ہیں، وزیراعظم کے پروٹوکول کیلئے درخواست نہیں کی گئی، وزیراعظم کی جانب سے عام شہری کی طرح سفر کرنے میں کوئی عار نہیں۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا جنرل مشرف کے دور میں پاکستانی شہری پیسوں کے عوض امریکہ کو دیئے گئے،انہوں نے کہا گوانتا ناموبے میں تین پاکستانی بغیر الزام کے قید ہیں، اس معاملے پر امریکی حکام سے رابطے میں ہیں۔

وزیرخارجہ نے قومی اسمبلی کو بتایا ہے کہ سڑک حادثے میں ملوث امریکی سفارتکار ابھی پاکستان میں ہے، نوجوان کی ہلاکت پر قانون کے مطابق کارروائی ہوگی۔

وزیر خارجہ کہناتھاکہ شام کے معاملے میں فریق نہیں ہیں، پاکستان شام کی صورتحال پر فی الحال غیر جانبدار ہے، ہم شام کے مسئلے کا حل مذاکرات سے چاہتے ہیں، شام کے معاملات میں براہ راست شامل ہو کر مزید مشکلات میں نہیں پڑنا چاہتے، پاکستان کو شام کے مہاجرین کی صورتحال پر تشویش ہے، شام کے مسئلے کے حل کی سفارتی کوششوں میں پاکستان شریک ہے۔

متعلقہ خبریں