Daily Mashriq


کبھی آپ نے سوچا کہ انگور کی آئسکریم کیوں دستیاب نہیں ہوتی؟  

کبھی آپ نے سوچا کہ انگور کی آئسکریم کیوں دستیاب نہیں ہوتی؟  

آئس کریم کے شیدائیوں سے اس کے ذائقوں کی فہرست کو پوچھیں وہ آپ کو ایک لمبی فہرست گنوا دیں گے لیکن کہیں کسی دکان یا آؤٹ لیٹ پر جا کر فہرست خود سے بھی دیکھ لیں ان میں ایک ذائقہ غائب ہوگا۔

انگور کی آئس کریم کا ذکر نہ سننے کو ملتا ہے اور نہ یہ کھانے کو ملتی ہے۔ آپ نے  کبھی سوچا اس کی وجہ کیا ہے ؟

 انگور میں پانی کی مقدار زیادہ ہوتی ہے، اس لیے ان کا استعمال تروتازہ  رہنے کے لیے کیا جاتا ہے اور یہی وجہ  انگور کی آئس کریم دستیاب نہ ہونے کی ہے۔انگوروں کو  جمانے کی صورت میں آئس کریم کی بجائے برف بن جاتی ہے۔

انگور کے اوپر سے اس کی جلد نہ اتارنے کی صورت میں انگور کا چھلکا منہ میں آئے گا اور جلد اتار دینے سے اس کا ذائقہ ختم ہوجائے گا۔

انگور کی آئس کریم کی دستیابی گلی محلے میں موجود دکانوں پر چھوٹے پیمانے پر بننے والی آئسکریم میں تو ہو سکتی ہے لیکن صنعتی پیمانے پر اس کی تیاری کو مشکل قرار دیا جاتا ہے۔

لیکن یہیں سوال اٹھتا ہے کہ چیریز میں بھی پانی کی مقدار 81 فی صد ہوتی ہے پھر اس کی آئس کریم کیسے دستیاب ہے۔

اس کا جواب آئس کریم بنانے والی مشہور کمپنیوں کی طرف سے یہ ہے کہ لوگ چیریز کا ذائقہ زیادہ پسند کرتے ہیں۔اس لیے ا س کی آئس کریم بنانے کی کوشش کرنا معنی رکھتا ہے۔زیادہ تر لوگ آئس کریم اور انگور دونوں کو بے جوڑ سمجھتے ہیں۔

آئس کریم بنانے کی مشہور فیکٹری بین اینڈ جیری نے انگور کی آئس کریم بنانے کی کوشش کی تھی۔کمپنی کے فلیور لیب میں ذائقہ چکھنے والے مہمانوں کو اس کا ذائقہ کچھ خاص متا ثر نہیں کر سکا اس لیے برانڈ نے دوبارہ ایسی کی کوشش ہی نہیں کی۔

متعلقہ خبریں