Daily Mashriq

نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا معاملہ، کابینہ کی کمیٹی فیصلہ کرے گی

نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا معاملہ، کابینہ کی کمیٹی فیصلہ کرے گی

قوم احتساب بیورو (نیب) نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے پر گیند دوبارہ وفاقی حکومت کے کورٹ میں ڈال دی۔

نیب کی جانب سے پیشرفت حکومتی ترجمان فردوس عاشق اعوان کے اس بیان کے بعد سامنے آئی کہ نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا فیصلے نیب اور میڈیکل بورڈ کی سفارشات کی روشنی میں کیا جائے گا۔

نیب کے ترجمان عاصم علی نوازش نے ڈان نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ وزارت داخلہ کو جمع کرائے گئے جواب میں کہا گیا ہے کہ 'ای سی ایل سے کسی کا نام نکالنے کے لیے وفاقی حکومت مجاز اتھارٹی ہے۔'

انہوں نے کہا کہ نیب نے اپنے جواب میں کہا ہے کہ ایم کیو ایم کے سابق ورکر صولت مرزا کے کیس سمیت ماضی میں ایسی مثالیں موجود ہیں جن میں وفاقی حکومت نے مجرمان کا 'ای سی ایل' سے نام نیب سے پوچھے بغیر نکالا۔'

قبل ازیں نیب کا کہنا تھا کہ اسے وزارت داخلے سے نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس موصول ہو گئی ہیں اور وہ قانون کے مطابق اپنی رائے دے گی۔

اتھارٹی کے ترجمان نے ڈان نیوز کو بتایا تھا کہ 'رپورٹس کا جائزہ لینے کے بعد ہم قانون کے مطابق طے شدہ وقت کے اندر اپنی رائے دے دیں گے۔'

کابینہ کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس طلب

دوسری جانب سابق وزیر اعظم نواز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کے معاملے پر کابینہ کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس منگل کو طلب کر لیا گیا۔

کابینہ کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس منگل کی صبح 10 بجے وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم کی زیر صدارت ہوگا۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق کابینہ کی ذیلی کمیٹی میں وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر اور سیکریٹری داخلہ بھی شامل ہے۔

ذیلی کمیٹی کے اجلاس میں نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے معاملے پر مشاورت کے بعدوزیراعظم عمران خان کو تجاویز سے آگاہ کیا جائے گا جس کے بعد وزیراعظم حتمی فیصلہ کریں گے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل نیب نے وزارت داخلہ کو نواز شریف کی میڈیکل رپورٹ فراہم کرنے کا کہا تھا اور گزشتہ روز حکومت سے خود فیصلہ کرنے کا کہا۔

مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے بیان میں کہا کہ اجلاس میں پارٹی کے صدر شہباز شریف کے نمائندے عطااللہ تارڑ اور نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان بھی شریک ہوں گے اور سابق وزیر اعظم کی صحت اور عدالتی احکامات کے حوالے سے تفصیلات بیان کریں گے۔

کابینہ کی ذیلی کمیٹی معاملے پر اپنی سفارش وفاقی کابینہ کے سامنے رکھے گی۔

نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا معاملہ،نیب نے گیند حکومت کے کورٹ میں ڈال دی

واضح رہے کہ سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف نام ای سی ایل سے خارج نہ کیے جانے کی وجہ سے ٹکٹ کنفرم ہونے کے باوجود علاج کے لیے پیر کو لندن روانہ نہیں ہو سکے تھے۔

شہباز شریف نے سابق وزیر اعظم اور اپنے بھائی کا نام 'ای سی ایل' سے نکالنے کے لیے وزارت داخلہ کو درخواست دی تھی۔

متعلقہ خبریں