Daily Mashriq

وزیراطلاعات کی ایک بار پھر فوجی عدالتوں پراتفاق رائے کیلئے حزب اختلاف کو دعوت

وزیراطلاعات کی ایک بار پھر فوجی عدالتوں پراتفاق رائے کیلئے حزب اختلاف کو دعوت

وفاقی وزیر اطلاعات چوہدری فواد حسین نے ایک مرتبہ پھر حزب اختلاف کی جماعتوں کو دعوت دی ہے کہ وہ دہشت گردی کے خلاف فیصلہ کن کارروائی کی غرض سے فوجی عدالتوں پر اتفاق رائے پیدا کرنے کیلئے مل بیٹھ کر فیصلہ کریں۔ ہفتہ کی سہ پہر پنڈدادن خان کے قریب کھیوڑہ کے مقام پر دوستی سپورٹس فیسٹیول سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان پر تمام سیاسی جماعتوں نے اتفاق کیا تھا اور اس پر متفقہ طور پر عملدرآمد کی ضرورت ہے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ دہشت گردی کے خلا ف کامیاب کارروائیوں سے ملک سے بڑے پیمانے پر اس ناسور کا خاتمہ ہوگیا ہے اور دہشت گردی کے اکا دکا واقعات دہشت گردی کے خلاف ہمارے عزم کو متزلزل نہیں کرسکتے۔چوہدری فواد حسین نے کہا کہ پورا پاکستان کوئٹہ میں ہزارہ برادری کو نشانہ بنانے پر سوگوار ہے انہوںنے کہا کہ گزشتہ ماہ نیوزی لینڈ میں ہونے والے دہشت گردی کے واقعے سے ظاہر ہوتا ہے کہ کوئی بھی ملک تشدد سے بچا ہوا نہیں ہے۔وفاقی وزیر نے کہاکہ حکومت نے کامیاب فوجی کارروائیوں کے بعد فاٹاکو قومی دھارے میں لانے کیلئے ٹھوس اقدامات کیے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگلے دس برسوں میں سابقہ فاٹا میں تعمیر نو اور ترقی پر ایک سو ارب روپے خرچ کیے جائیں گے۔چوہدری فواد حسین نے کہاکہ حکومت پاکستان کو روشن مستقبل کا حامل خوشحال ملک بنانے کیلئے پرعزم ہے اور ایسا بدعنوان عناصر کو قانون کے کٹہرے میں لاکر ہی ممکن ہوسکتاہے۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے نئی خارجہ پالیسی وضع کی ہے اور جلد ہی پاکستان پورے خطے کی قیادت کرے گا انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کو اہم عالمی رہنما کے طور پر تسلیم کیا جارہا ہے جوملک کو خوشحال مستقبل کی جانب لے جانے کیلئے قیادت کررہے ہیں۔

متعلقہ خبریں