Daily Mashriq


وزیرخارجہ :قومی معیشت کی بحالی حکومت کی اولین ترجیح ہے

وزیرخارجہ :قومی معیشت کی بحالی حکومت کی اولین ترجیح ہے

وزیر خارجہ شاہ محمود  قریشی نے کہا ہے کہ ملکی معیشت کو فعال بنانا پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

 آج (بدھ) صبح اسلام آباد میں کاروباری رہنماوں کے سربراہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب وزیراعظم عمران خان نے چھ ماہ قبل اقتدار سنبھالا تو انہیں بدعنوانی، سرمائے کی مندی اور دیگر سماجی و اقتصادی مسائل سمیت کئی بڑے چیلنجز ورثے میں ملے جن پر قابو پانا تھا۔

 شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وزیرخزانہ اسد عمر کی زیر صدارت پاکستان تحریک انصاف کی معاشی ٹیم نے حکومت کے پہلے چھ ماہ کے دوران معیشت کی بہتری کےلئے کئی  اقدامات کئے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کو تبدیلی کے ایجنڈے پر منتخب کیاگیا ہے اور عوام اس حکومت کی مدت کی تکمیل پر واضح تبدیلی دیکھیں گے۔

وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان افغانستان میں امن چاہتا ہے اور حکومت ملک میں امن عمل کےلئے تعاون کررہی ہے۔

 بھارت کے ساتھ تعلقات کےحوالے سے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اقتدار سنبھالتے ہی بھارت کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھایا اور وزرائے خارجہ کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر ملاقات کرنے کا کہا تاکہ دونوں ملکوں کے درمیان تمام تصفیہ طلب مسائل مذاکرات کے ذریعے حل کئے جاسکیں۔

 وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان نے متعدد اقدامات کئے ہیں جن میں سے ایک اقدام کرتارپور راہداری کھولنے کا ہے لیکن بھارت نے پاکستان کے اس جذبے کا بھی نیک نیتی سے جواب نہیں دیا۔

 وزیر خزانہ اسد عمر نے کاروباری رہنماؤں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت اداروں میں اصلاحات لانے کےلئے کوششیں کررہی ہے۔

 انہوں نے کہا کہ اداروں میں بہترین پیشہ وارانہ افراد کو تعینات کیاجارہا ہے۔

 وزیر خزانہ نے کہاکہ ہم ٹیکس چوری روکنے کےلئے آئی ٹی کا اطلاق کررہے ہیں۔

 مشیر تجارت عبدالرزاق داود نے اپنے خطاب میں کہا کہ ملک میں صنعتوں کے فروغ کا عمل شروع کردیا گیا ہےاور اس ضمن میں آنے والے مہینوں میں ہماری پالیسیوں کے خاطر خواہ نتائج سامنے آئیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہماری پالیسیوں کے نتیجے میں درآمدات کم ہوئی ہیں اور ان میں مزید کمی کی جائے گی۔

 عبدالرزاق داود نے کہا کہ ہم چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو ختم کرنے کےلئے بھی ایک حکمت عملی کو حتمی شکل دے رہے ہیں۔مشیر تجارت نے کہا کہ ہم نے خام مال پر بھی ڈیوٹیز میں کمی کی ہے اورچھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار کے فروغ کےلئے  آئندہ بجٹ میں مزید اقدامات کئے جائیں گے کیونکہ اس کاہماری معیشت میں بڑا کردار ہے۔

متعلقہ خبریں