Daily Mashriq

اقوام متحدہ کی بھارتی شہریت کے نئے قانون پر گہری تشویش

اقوام متحدہ کی بھارتی شہریت کے نئے قانون پر گہری تشویش

اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ادارے نے بھارتی شہریت کے نئے قانون پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوۓ اسے امتیازی قرار دیا ہے ۔ انسانی حقوق کے ادارے نے کہا ہے کہ شہریت قانون میں ترمیم کے ذریعے سے ہندووں ، سکھوں، پارسی ، عیسائی اور دوسرے مذاہب کے لوگوں کو ترجیح دی گئی جبکہ مسلمانوں کو اس بل میں مکمل طور پر نظر انداز کیا گیا ہے۔ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ادارے کے ترجمان نے کہا کہ یہ قانون بھارتی آئین کی بھی نفی کرتا ہے جس میں تمام شہریوں کو یکساں حقوق دینے کا وعدہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام مہاجرین کو تحفظ اور احترام دینا ضروری ہے۔ توقع ہے کہ بھارتی سپریم کورٹ اس قانون کا دوبارہ جائزہ لیتے وقت اسے عالمی قوانین کے مطابق بنائے گی۔

متعلقہ خبریں