Daily Mashriq

سعودی عرب میں خواتین پر نظر رکھنے والی متنازعہ ایپ پر تنقید

سعودی عرب میں خواتین پر نظر رکھنے والی متنازعہ ایپ پر تنقید

ریاض: سعودی عرب میں ایک متنازعہ ایپ استعمال کی جارہی ہے جس کے ذریعے مرد سرپرست کی حیثیت سے اپنی بیویوں، بیٹیوں اور دیگر خواتین کی نگرانی اور ان کی نقل و حمل پر نظر رکھ سکیں گے اور یہ ایپ انہیں ملک سے باہر نکلنے سے بھی باز رکھ سکے گی۔

اس ایپ کا نام ’ابشر‘ رکھا گیا ہے جسے سعودی عرب میں تیار کیا گیا ہے۔ آخری خبروں تک گوگل اور ایپل اسٹور پر یہ ایپ دستیاب تھی جس پر شدید تنقید کی جارہی ہے۔ بعض حلقوں نے دونوں بڑے اداروں سے ایپ ہٹانے کا مطالبہ بھی کیاہے جس کی بدولت سعودی مرد خواتین کی جاسوسی کرسکتے ہیں۔

سعودی عرب میں گھر کے سربراہ خواتین کے معمولات اور نقل وحمل پر اثرانداز ہوتے ہیں اور ابشر ایپ کے ذریعے کسی بھی مقام پر ان کی موجودگی کو نوٹ کیا جاسکتا ہے۔ ایپ انسٹال کرنے کے بعد مرد یا گھر کا سربراہ زیرِ کفالت خاتون کو سفر کی اجازت دینے یا نہ دینے، کسی مقام پر جانے سے روکنے، کسٹم حکام کی مدد سے بیرونِ ملک جانے سے باز رکھنے کےاہل ہوں گے۔ ایپ حقیقی وقت میں کام کرتی ہے اور اسے سعودی حکومت کی حمایت حاصل ہے۔

متعلقہ خبریں