Daily Mashriq

ترقیاتی ایجنڈے کا فروغ ،وزیراعظم کا ایس سی او ارکان پر فنڈ اور ترقیاتی بینک کے قیام پر زور

ترقیاتی ایجنڈے کا فروغ ،وزیراعظم کا ایس سی او ارکان پر فنڈ اور ترقیاتی بینک کے قیام پر زور

وزیراعظم نے شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ممالک پرزور دیا ہے کہ وہ مقامی کرنسیوں میں تجارت کے لئے انتظامات کو حتمی شکل دیں اور بین العلاقائی ترقیاتی ایجنڈے کو تیزی سے آگے بڑھانے کیلئے شنگھائی تعاون تنظیم فنڈ اور شنگھائی تعاون تنظیم ترقیاتی بینک قائم کریں۔انہوں نے یہ بات آج کرغزستان کے دارالحکومت بشکیک میں شنگھائی تعاون تنظیم کی کونسل کے سربراہان مملکت کے انیسویں اجلاس میں بین الاقوامی سیاست کے تناظر میں تنظیم کے لئے اپنا آٹھ نکاتی ایجنڈا پیش کرتے ہوئے کیا۔وزیراعظم نے کہا کہ ہمیں تعاون سے متعلق اپنے تصورات کو نئی جہت دینی چاہیے جو تصادم کی مخالفت کرتے ہیں اور ہمیں علاقائی اور عالمی سطح پر پرامن بقائے باہمی کی کوششوں کو آگے بڑھانا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ممالک کو تنازعات کے خطرات کو کم کرنے کیلئے تنظیم کے اہم مقصد کو مضبوط بنانے ،اعتماد سازی کے عمل کو تیز کرنے اور استحکام کے فروغ کیلئے اس جذبے کو فروغ دینا چاہیے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان غیرقانونی تسلط میں لوگوں کے خلاف ریاستی دہشت گردی سمیت ہرقسم کی دہشت گردی کی مذمت کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم ان چند ممالک میں سے ہیں جنہوں نے کامیابی کے ساتھ دہشت گردی کا رخ موڑ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان انسداد دہشت گردی کے لئے اپنے تجربات اور مشاہدات کا تبادلہ کرنے کیلئے تیار ہے، ہم شنگھائی تعاون تنظیم کے انسداد دہشت گردی کے اقدامات میں بھی موثر کردار ادا کرتے رہیں گے۔ افغان مسئلہ کا حوالہ دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ حتمی طور پر اس حقیقت کو تسلیم کیا جائے کہ افغانستان کے تنازعہ کا کوئی فوجی حل نہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانوں کی قیادت میں ان ہی کے شروع کردہ امن عمل کے ذریعے امن اور مفاہمت کی کوششوں کی بھرپور حمایت کررہا ہے۔انہوں نے کہا کہ افغانستان تنازعہ کے حل کے بعد شنگھائی تعاون تنظیم کا تعاون ناگزیر رہے گا۔

متعلقہ خبریں