قومی سلامتی کمیٹی کےاجلاس میں ممبئی حملوں پر نوازشریف کا بیان مسترد

قومی سلامتی کمیٹی کےاجلاس میں ممبئی حملوں پر نوازشریف کا بیان مسترد

ویب ڈیسک:وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں نواز شریف کے ممبئی حملوں سے متعلق بیان کو مسترد کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیرصدارت نواز شریف کے ممبئی حملوں سے متعلق بیان پر غوروخوص کیلئے نیشنل سکیورٹی کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ سمیت تینوں مسلح افواج کے سربراہان، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی کے سربراہ، ڈی جی آئی ایس آئی، ڈی جی ملٹری آپریشنز ،وزیردفاع، قومی سلامتی کے مشیر نے شرکت کی۔

 وزیراعظم ہاؤس سے جاری اعلامیہ کے مطابق قومی سلامتی کمیٹی نے متفقہ طور پر نواز شریف کے ممبئی حملوں پر  بیان کو غلط،حقائق کے منافی اور گمراہ کن ہے، کمیٹی کی جانب سے تمام الزامات کو سختی سے رد کر دیاگیا۔

اعلامیے کےمطابق شرکاء نے بھارت کو  ممبئی حملوں کے کیس میں تاخیر کا ذمہ قرار دیا، شرکاء کا کہنا تھا کہ اجمل قصاب تک رسائی دینے سے انکار اور اس کی عجلت میں پھانسی کے باعث کیس مکمل نہ ہوسکا،  پاکستان بھارت سے کلبھوشن یادیو اور سمجھوتہ ایکسپریس سانحہ پر تعاون کا بھی منتظر ہے، پاکستان دہشت گردی کیخلاف جنگ میں اپنا کردار ادا کرتا رہے گا۔ اجلاس میں اخباری انٹرویو میں نواز شریف کے جھوٹے دعوؤں اور الزامات کی مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ پاکستان دہشت گردی کیخلاف جنگ میں اپنا کردار ادا کرتا رہے گا۔

متعلقہ خبریں