Daily Mashriq

مسلم لیگ (ن) کے وکلا ونگ کے نائب صدر ’اغوا‘

مسلم لیگ (ن) کے وکلا ونگ کے نائب صدر ’اغوا‘

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے وکلا ونگ کے نائب صدر کو ٹھوکر نیاز بیگ سے مبینہ طور پر نامعلوم افراد نے اغوا کرلیا۔

ہنجروال پولیس اسٹیشن میں ان کے بھائی ناظم حسین کی جانب سے درج کروائی گئی شکایت میں کہا گیا کہ ’کاشف علی چوہدری کیبل کی تار لینے سرشار مارکیٹ گئے تھے جہاں 2 گاڑیوں میں سوار نامعلوم افراد نے آکر انہیں روکا‘۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ ملزمان نے ایڈووکیٹ کاشف کو زبردستی پکڑا اور انہیں گاڑی میں ڈال کر فرار ہوگئے۔

پولیس نے مقدمہ درج کرنے کے لیے شکایت وصول کر کے وکیل کی جلد بازیابی کے لیے تحقیقات کا آغاز کردیا۔

تاہم سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی کلوز سرکٹ کیمرہ فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ سادہ لباس میں ملبوس نقاب پوش افراد کاشف چوہدری کو پکڑ کر لے جارہے تھے اور بعد میں انہیں گاڑی میں ڈال دیا گیا۔

اس حوالے سے یہ رپورٹس بھی سامنے آئیں ہیں کہ کاشف چوہدری نے 3 روز قبل سابق وزیراعظم نواز شریف کی احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر ریاستی ادارے کے خلاف نعرے بازی کی تھی۔

اس ضمن میں ذرائع کا کہنا تھا کہ ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس (ڈی ایس پی) کے عہدے کے افسر اس معاملے کی تحقیقات کررہے ہیں۔

پنجاب بار کونسل کا وکیل کی رہائی کا مطالبہ

دوسری جانب پنجاب بار کونسل نے کسی جرم یا قانونی جواز کے بغیر مبینہ طور پر سیکیورٹی اداروں کی جانب سے ایڈووکیٹ کاشف چوہدری کے ’اغوا‘ کی مذمت کی۔

پی بی سی نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ’سیکیورٹی ایجنسیز کا اقدام انتہائی ناقابلِ مذمت ہے کیوں کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کا کام لوگوں کی حفاظت کرنا ہے انہیں دہشت زدہ یا ہراساں کرنا نہیں‘۔

بیان میں حکومت اور سیکیورٹی اداروں کے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا گیا کہ کاشف چوہدری کی رہائی کو جلد از جلد ممکن بنائیں بصورت دیگر پنجاب کی وکلا برادری آئندہ 24 گھنٹوں میں خود ایکشن لے گی۔

متعلقہ خبریں