Daily Mashriq


سانس میں بو سے نجات دلانے میں مددگار طریقے

سانس میں بو سے نجات دلانے میں مددگار طریقے

سانس میں بو کسے پسند ہوسکتی ہے؟ یقیناً اس سے پوری شخصیت کا تاثر خراب ہوجاتا ہے۔

مگر یہ بو پیدا کیوں ہوتی ہے اور اس کی وجہ کیا ہے؟

بنیادی طور پر تمام غذائیں منہ کے اندر ٹکڑوں میں تبدیل ہوتی ہیں اور اگر آپ تیز بو والی غذائیں جیسے لہسن یا پیاز کھاتے ہیں تو دانتوں کی صفائی یا ماؤتھ واش بھی ان کی بو کو عارضی طور پر ہی چھپا پاتے ہیں اور وہ ا±س وقت تک ختم نہیں ہوتی جب تک یہ غذائیں جسم سے گزر نہ جائیں۔ اگر روزانہ دانتوں کو برش نہ کیا جائے تو خوراک کے اجزاءمنہ میں باقی رہ جاتے ہیں، جس سے دانتوں کے درمیان، مسوڑھوں اور زبان پر جراثیموں کی تعداد بڑھنے لگتی ہے جو سانس میں بو کا باعث بنتے ہیں۔

تاہم یہ بھی حقیقت ہے کہ اس سے نجات اتنی مشکل نہیں ہوتی، ایسے ہی کچھ طریقے درج ذیل ہیں۔

چمچ سے مدد لیں

دانتوں میں برش کرنا تو ضروری ہے مگر اس کے ساتھ ساتھ آپ کو زبان کی اوپری سطح کو بھی صاف کرنا چاہئے، اس کے لیے چمچ سے مدد لی جاسکتی ہے جسے نرمی سے زبان کی اوپری سطح پر رگڑ کر جلد کے مردہ خلیات کو ہٹایا جاسکتا ہے، جن کی تہہ وہاں بن جاتی ہے، جس سے سانس کی بو سے نجات میں مدد ملتی ہے۔

خلال سے بھی مدد لیں

دانتوں کے درمیان غذا کے ذرات پھنس جانا بھی سانس کی بو کا باعث بنتے ہیں اور ان سے نجات کے لیے خلال سے بہتر طریقہ کار کوئی نہیں۔

پانی مناسب مقدار میں پینا

جسم میں پانی کی مناسب مقدار منہ کی صحت کے لیے بہت ضروری ہے، پانی کی کمی یا ڈی ہائیڈریشن کے نتیجے میں منہ کے مختلف امراض کا خطرہ بڑھتا ہے جن میں سانس کی بو بھی قابل ذکر ہے، تو مناسب مقدار میں پانی پینا عادت بنالینا بھی سانس کو بدبو دار ہونے سے بچاسکتا ہے۔

ایک سیب کھالیں

اس پھل میں پانی کی مقدار بہت زیادہ ہوتی ہے جو منہ میں لعاب دہن کی مقدار بڑھاٹا ہے، جس سے سانس کی بو کا باعث بننے والے بیکٹریا ختم ہوجاتے ہیں۔

چائے

طبی ماہرین کے مطابق صبح کے وقت منتخب کردہ مشروب بھی سانس میں بو سے نجات دلانے میں مدد دے سکتا ہے، اس کے لیے سبز چائے یا بغیر دودھ کی چائے کا استعمال فائدہ مند ہوتا ہے، جس کی وجہ ان مشروبات میں پولی فینولز کی موجودگی ہے جو کہ منہ میں بیکٹریا اور سلفرکمپاﺅنڈ کو کم کرتا ہے۔

چیونگم سے مدد لیں

اگر تو سانس میں بو سے پریشان ہیں تو اس سے نجات کے لیے چیونگم سے بھی مدد لی جاسکتی ہے اور ہاں تمباکو نوشی کا استعمال بھی سانس میں بو کا باعث بنتا ہے۔

متعلقہ خبریں