Daily Mashriq

پولیس افسران کا میڈیا سے گفتگو کرنا درست نہیں، وزیر اعلیٰ سندھ

پولیس افسران کا میڈیا سے گفتگو کرنا درست نہیں، وزیر اعلیٰ سندھ

کراچی: سندھ میں امن و امان کی صورتحال کے حوالے سے ہونے والے اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ پولیس افسران کا میڈیا سے گفتگو کرنا ٹھیک نہیں۔

اجلاس کی صدرات وزیر اعلیٰ سندھ نے کی جبکہ مشیر مرتضیٰ وہاب، آئی جی سندھ، پرنسپل سیکریٹری، سیکریٹری داخلہ، کمشنر کراچی، ایڈیشنل آیہ جی سی ٹی ڈی، ڈی آئی جی سائوتھ اور دیگر پولیس افسران بھی شریک ہوئے۔

اس موقع پر امن و عامہ کی صورتحال کے بارے میں بریف کرتے ہوئے انسپکٹر جنرل پولیس(آئی جی) نے بتایا کہ شہر میں بائیک چھیننے اور راہزنی پر کسی حد تک قابو پالیا گیا ہے، اس سلسلے میں ضلع وسطی میں خصوصی اقدامات کیے گئے جہاں وارداتوں کا تناسب 2018 میں کافی زیادہ تھا۔

آئی جی پی کا مزید کہنا تھا کہ بینک ڈکیتیوں کے تمام کیسز پر کام کیا گیا ہے جبکہ جعلی اسلحہ لائسنس بنا کر اسمگلنگ اور چوری شدہ اسلحہ فراہم کرنے والا گروہ بھی پکڑا گیا ہے جن کے ساتھ ملوث پولیس اہلکاروں اور ضلعی دفتر کے سہولت کاروں کو بھی گرفتار کیا گیا ہے۔

آئی جی نے وزیراعلیٰ کو یقین دہانی کروائی کہ شہر میں امن کی مجموعی صورتحال بہتر ہے ،2018 میں ضلع مغربی میں بائیک چھیننےکے واقعات بہت زیادہ ہوئے تھے اس لئے وہاں پر ایک خصوصی فورس کو ٹاسک دیا گیا ہے۔

اجلاس میں وزیر اعلیٰ سندھ نے ہدایت کی پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے میچز اور نیول انٹرنیشنل امن مشقوں کی سکیورٹی فول پروف ہونی چاہیے۔

وزیر اعلیٰ کا مزید کہنا تھا کہ پولیس افسران میڈیا سے بات چیت شروع کرتے ہیں، جو ٹھیک نہیں۔

اجلاس میں وزیر اعلیٰ کو علی رضا عابدی قتل کیس اور چائنیز قونصل خانہ کے کیس میں ہونے والی پیش رفت سے بھی آگاہ کیا گیا،اس موقع مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ بغیر یونیفارم کے کوئی پرائیوٹ گارڈ اسلحہ لیکر نہیں چل سکتا ،پرائیوٹ سکیورٹی ایجنسیوں کو ہدایت کریں کے وہ اپنے گارڈز کی ویریفکیشن کروائیں۔

انہوں نے نان کسٹم پیڈ اور جعلی نمبر پلیٹ والی گاڑیوں کو پکڑنے کا ٹاسک پولیس کے حوالے کردیا اس کے ساتھ حکم دیا کہ تعلیمی اداروں میں نشہ آور اشیا فراہم کیے جانے کی اطلاعات کا سختی سے جائزہ لیا جائے۔

وزیراعلیٰ نے فیصلہ کیا کہ ان اطلاعات کا اسکول انتظامیہ کے ساتھ مل کر نگرانی کی جائے گی، یہ ہمارے بچے ہیں اور ہمیں ہی ان کی حفاظت کرنی ہے۔

دوسری جانب ڈی آئی جی ساؤتھ نے بتایا کہ ضلع جنوبی کراچی میں 30 مقامات پر خصوصی فورس تعینات کی گئی ہے جبکہ شہر میں نشہ آور اشیاء سپلائی کرنے والے ایک اہم شخص کی گرفتاری بھی ہوئی ہے۔

متعلقہ خبریں