Daily Mashriq

حکومتی اقدامات کے نتیجے میں حسابات جاریہ کا خسارہ 7 ارب ڈالر رہ گیا ہے،مشیر خزانہ

حکومتی اقدامات کے نتیجے میں حسابات جاریہ کا خسارہ 7 ارب ڈالر رہ گیا ہے،مشیر خزانہ

خزانہ، محصولات اور اقتصادی امور کے بارے میں وزیراعظم کے مشیر ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کہا ہے کہ حکومت معیشت کے استحکام کیلئے مالیاتی اور حسابات جاریہ کے خسارے پر قابو چاہتی ہے۔

مشیر خزانہ نے یہ بات اسلام آباد میں انسٹی ٹیوٹ آف چارٹرڈ اکائونٹنیٹس آف پاکستان کے زیر اہتمام پوسٹ بجٹ کانفرنس 2019سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ موضوع تھا "پاکستان بحالی کی راہ پر"۔

انہوں نے کہاکہ مالیاتی اور حسابات جاریہ کا خسارہ حکومت کیلئے بڑے خلیج میں اور موثر پالیسیوں کے ذریعے اس پر قابو پا کر معیشت کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا جاسکتا ہے۔

مشیر خزانہ نے کہا کہ حکومت کو 20ارب ڈالر حسابات جاریہ کا خسارہ ورثے میں ملا اور اسے قرضوں کی ادارئیگی کیلئے دوہزار ارب روپے درکار تھے۔

حفیظ شیخ نے کہا کہ حکومت نے دوست ملکوں کے ساتھ مختلف انتظامات کے ذریعے موخر ادائیگیوں پر تیل کے حصول سمیت متعدد اقدامات کئے ہیں اور ان تمام اقدامات کے نتیجے میں گزشتہ چند ماہ کے دوران حسابات جاریہ کا خسارہ کم ہو کر 7ارب ڈالر رہ گیا ہے۔

متعلقہ خبریں