Daily Mashriq

غنی خان مقصدکیلئے جدوجہدکی علامت تھے،اسفندیار

غنی خان مقصدکیلئے جدوجہدکی علامت تھے،اسفندیار

پشاور ( نیوز رپورٹر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ غنی خان انسانیت کا مجسمہ تھے اور جدوجہد آزادی کے دوران انگریز سامراج کی قیدو بند کی صعوبتیں برداشت کرنے کے باوجود استقلال کا پیکر رہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے باچا خان مرکز میں پشتو کے عظیم شاعر ،مصور ،فلسفی اور سیاستدان غنی خان کی برسی کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر قومی وطن پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری ہاشم بابر سمیت سیاسی و ادبی شخصیات نے اپنے مقالوں کے ذریعے غنی خان کی زندگی اور جدوجہد پر روشنی ڈالی ، تقریب میں مرکزی سینئر نائب صدر حاجی غلام احمد بلور ،جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین ،صوبائی سینئر نائب صدر سید عاقل شاہ، ڈائریکٹر باچا خان ٹرسٹ ایمل ولی خان ، اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک سمیت مرکزی و صوبائی قائدین بھی موجود تھے، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ غنی خان نے انگریزوں کے خلاف آزادی کی جدوجہد میں بے شمار بار گرفتارہوکر ہری پور،ملتان،لاہور،ڈیرہ اسماعیل خان حیدرآباد اور پشاور کی جیلوں میں قیدبامشقت اور قید تنہائیگزاری لیکن کبھی ہمت نہ ہارے اور ہمیشہ عزم و استقلال کا پیکر بنے رہے۔

متعلقہ خبریں