Daily Mashriq


کراچی میں 7سالہ بچی کے ساتھ زیادتی کے بعد قتل کیخلاف مشتعل مظاہرین پر پولیس کی فائرنگ

کراچی میں 7سالہ بچی کے ساتھ زیادتی کے بعد قتل کیخلاف مشتعل مظاہرین پر پولیس کی فائرنگ

کراچی میں 7سالہ بچی سے مبینہ زیادتی کے بعد قتل کیخلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین پر پولیس کی فائرنگ میں ایک شخص جاں بحق اور 12 افراد شدید زخمی ہوگئے۔

کراچی میں 7 سالہ بچی سے مبینہ ذیادتی اور قتل کیخلاف اہلخانہ مشتعل ہو گئے۔7 سالہ رابعہ 15 اپریل کو چیز لینے گئی تھی جس کے بعد اس کا کچھ پتہ نہ چل سکا۔ اہلخانہ کے مطابق واقعے کی پولیس کو بھی اطلاع دی گئی تا ہم گزشتہ روز بچی کی تشدد زدہ لاش منگھو پیرناردرن بائی پاس سے مل گئی جس کے بعد اہلخانہ اور علاقہ مکین شدید مشتعل ہو گئے۔

مظاہرین لاش لے کر منگھو پیر روڈ کٹی پہاڑی پر پہنچ گئے جہاں احتجاج کیا، جس پر پولیس نے حرکت میں آکر مشتعل افراد کو منتشر اور لاش والی ایمبولینس منتقل کرنے کی کوشش کی، جس کے نتیجے میں مظاہرین مزید مشتعل ہوتے ہوئے پولیس پر پتھراؤ شروع کر دیا جس سے نمٹنے کیلے پولیس نے مظاہرین پر شیلنگ اور فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 12افراد زخمی اور ایک شخص کی جان چلی گئی۔

پولیس نے کافی کوشش کے بعد لاش کو وہاں سے منتقل کردیا، تاہم علاقے میں شدید کشیدگی برقرارہے،پولیس کے مطابق بچی کے والد کی جانب سے نامزد کئے گئے 3 ملزمان میں سے 2 کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ملزمان کا تیسرا ساتھی فرار ہے جس کی تلاش جاری ہے اور چھاپے مارے جارہے ہیں۔ بچی کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں زیادتی کی تصدیق ہوگئی ہے جبکہ مزید شواہد اکٹھے کرنے کے لیے لاش کے ڈی این اے نمونے لے لئے گئے ہیں۔

متعلقہ خبریں